روس کی فوجی اور بحری مشقیں کسی ملک کے خلاف نہیں: وزارت دفاع‎

روس کی فوجی اور بحری مشقیں کسی ملک کے خلاف نہیں: وزارت دفاع‎

ماسکو:روس کی وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ بیلا روس کے ساتھ شروع کی جانے والی بڑی فوجی مشقیں جارحانہ نہیں بلکہ دفاعی نوعیت کی ہیں اور یہ کسی بھی ملک یا ملکوں کے اتحاد کے خلاف نہیں ہیں۔


روس اپنے اتحادی ملک بیلاروس کے ساتھ مل کر یورپی یونین کی مشرقی سرحدوں پر انتہائی بڑی فوجی مشقوں کا آغاز کر چکا ہے۔ ان مشقوں پر مغربی دفاعی اتحاد نیٹو اور کئی یورپی ممالک، خاص طور پر بالٹک ریاستوں نے اپنی تشویش کا اظہار کیا ہے۔

ان مشقوں کو زاپاد 2017 کا نام دیا گیا ہے۔ یہ فوجی مشقیں بیس ستمبر تک جاری رہیں گی۔ زمینی مشقوں کے ساتھ ساتھ بحیرہ بالٹک میں جنگی مشقیں کی جا رہی ہیں۔

نیوویب ڈیسک< News Source