مریم اورنگزیب کی جانب سے کالا قانون کہنے پر اعتراض ہے: فرخ حبیب

مریم اورنگزیب کی جانب سے کالا قانون کہنے پر اعتراض ہے: فرخ حبیب
سورس: فوٹو: بشکریہ ٹوئٹر

اسلام آباد: وزیر مملکت برائے اطلاعات و نشریات فرخ حبیب نے کہا ہے کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی رہنماءمریم اورنگزیب کے چیئرمین ہونے کے باوجود کالاقانون کہنے پر اعتراض ہے۔ 

پاکستان مسلم لیگ (ن) کی رہنما مریم اورنگزیب کی زیر صدارت قومی اسمبلی کی ذیلی کمیٹی برائے اطلاعات کا اجلاس ہوا جس میں کمیٹی ممبر کنول شوذب، نفیسہ شاہ کے علاوہ وزیر مملکت برائے اطلاعات فرخ حبیب بھی شریک ہوئے۔

اجلاس میں میڈیا ہاؤسز اور صحافتی تنظیموں کے نمائندے بھی شریک ہوئے جس میں پاکستان میڈیا ڈویلپمنٹ اتھارٹی بل کا معاملہ زیر بحث آیا۔ اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے وزیر مملکت برائے اطلاعات فرخ حبیب نے کہا کہ پاکستان میڈیا ڈویلپمنٹ اتھارٹی فریم ورک ہے۔

انہوں نے بتایا کہ 10 سے 12 روز قبل ہماری قائمہ کمیٹی کا اجلاس ہوا اور پھر میڈیا تنظیموں اور پریس کلبز کے ساتھ یہ 14 نکاتی فریم ورک شیئر کیا گیا، ہمیں ذیلی کمیٹی پر اعتراض نہیں لیکن مریم اورنگزیب نے چیئرپرسن ہونے کے باوجود کہا کہ کالا قانون ہے، ان کی اس بات پر اعتراض ہے۔ 

فرخ حبیب کا کہنا تھا کہ احتجاج کرنا ہر کسی کا حق ہے، مریم اورنگزیب کو بطور چیئر پرسن کمیٹی تسلیم کیا، وہ کمیٹی میں آ کر اس پر بات کرتیں، چاہتے ہیں کہ معاملہ پارلیمنٹ سے ہی حل ہو لیکن ان کی جانب سے اسے کالا قانون کہے جانے پر اعتراض ہے۔