عالمی ادارہ صحت کی امداد بند ہونے پر چین کو تشویش ہے ، چینی وزارت خارجہ

 عالمی ادارہ صحت کی امداد بند ہونے پر چین کو تشویش ہے ، چینی وزارت خارجہ
Image Source: File Photo

بیجنگ: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طرف سے عالمی ادارہ صحت کی امداد بند کرنے کے بعد چین نے گہری تشویش کا اظہار کیا ہے۔


تفصیلات کے مطابق , گزشتہ دنوں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے عالمی ادارہ صحت پر چین کی طرفداری کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا تھا کہ تائیوان نے انسانوں سے انسانوں میں وائرس منتقلی کی وارننگ دے دی تھی لیکن عالمی ادارہ صحت نے ابتدائی وارننگ نظر انداز کرکے بیجنگ کی مدد کی۔ اس کے علاوہ امریکی صدر نے عالمی ادارہ صحت کی امداد روکنے کی دھمکی دی تھی جس کا آج باقاعدہ اعلان کیا گیا۔

امریکی فیصلے پر اپنے ردعمل میں چینی وزارت خارجہ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس وبا کی وجہ سے دنیا کی موجودہ صورتحال انتہائی سنگین اور تشویشناک مراحل میں ہے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ سنگین صورتحال کے موقع پر امریکی فیصلہ عالمی ادارہ صحت کی کورونا کے خلاف کوششوں کو کمزور اور عالمی تعاون کو شدید متاثر کرے گا۔

انہوں نے مطالبہ کیا کہ وبا کے اس وقت میں امریکا اپنی ذمہ داریاں اور فرائض پورے کرے، وبا کے خلاف عالمی ادارہ صحت کی بین الاقوامی کوششوں کی حمایت کرے۔

دوسری طرف امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے عالمی ادارہ صحت کی فنڈنگ روکنے کے فیصلے پر دنیا بھر میں تنقید کی جا رہی ہے چین کے بعد جرمنی نے بھی تنقید میں اپنی آواز شامل کر لی ہے۔