تبدیلی ووٹ کے ذریعے ہی آئے گی کسی اور کو فیصلے کا حق نہیں دیں گے، سعد رفیق

تبدیلی ووٹ کے ذریعے ہی آئے گی کسی اور کو فیصلے کا حق نہیں دیں گے، سعد رفیق

لاہور: وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کا کہنا ہے کہ ملک میں تبدیلی ووٹ کے ذریعے آئے گی کسی اور کو فیصلے کرنے کا حق نہیں دیں گے۔ہم نہیں چاہتے کھلاڑی عدالت سے نااہل ہو، عدالتی نااہلی اور مارشل لا سیاست دان کو عوام سے دور نہیں کرتے۔لاہور میں ریلوے اسٹیشن پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کا کہنا تھا کہ ٹیکنوکریٹ حکومت کی کوئی گنجائش نہیں، عوام کے فیصلے کے علاوہ کوئی بھی فیصلہ کرے قبول نہیں۔


انہوں نے کہا کہ پاکستان کو افغانستان، یمن، مصر اور شام نہیں بننے دیں گے، عالمی طاقتوں کا کھیل پاکستان میں نہیں چلنے دیں گے۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کا مستقبل جمہوریت سے وابستہ ہے، ملک ووٹ کے ذریعے بنا ہے، سیاست میں جب ایک دوسرے کے چہروں کو کالا کریں گے تو بات دور تک جائے گی، یہی لوگ کل روئیں گے کہ ہم نے کیا کیا۔سعد رفیق نے کہا کہ سی پیک کراچی اور پشاور جوڑے گا اور فاصلے کم ہوں گے، ملک صحیح سمت میں جارہا تھا اور سرمایہ آرہا تھا، پاکستان افراتفری اور انتشار کا متحمل نہیں ہوسکتا۔ جمہوری بالادستی کی صورت میں پاکستان سے محبت کا سلسلہ جاری رکھیں گے جب کہ تبدیلی ووٹ کے ذریعے آئے گی کسی اور کو فیصلے کرنے کا حق نہیں دیں گے۔

وزیر ریلوے نے کہا کہ ماضی میں فوجی اور سول وزرا نے ریلوے کو کباڑ خانہ بنایا جب کہ دوبارہ وزارت نہیں لینا چاہتا تھا لیکن ریلوے کے نامکمل منصوبوں کی تکمیل اور کارکنوں نے جو محبت اور پیار دیا اسی وجہ سے دوبارہ اس کابینہ میں شامل ہوا ہوں۔انہوں نے کہا کہ ٹرینوں کی بڑی تعداد اپ گریڈ ہوچکی ہیں جبکہ آمدو رفت بھی بروقت ہے، آیندہ سال ریلوے کا منافع 50 اور 53 ارب روپے کے درمیان ہوگا، پاکستان ریلوے کے ورکرز نے محنت کرکے ادارے کو بہتر کیا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ آزادی ٹرین پورے ملک میں جائے گی، تمام صوبوں کاکلچر ٹرین کاحصہ ہے۔

نیوویب ڈیسک< News Source