امریکہ اور چین نئے فوجی رابطہ نظام کے قیام پر متفق

امریکہ اور چین نئے فوجی رابطہ نظام کے قیام پر متفق

بیجنگ:  چینی اور  امریکی فوج نے ایک نئے رابطہ نظام کے قیام پر  مفاہمت کا اعلان کیا ہے۔ چین اور امریکہ کے درمیان فوجی تعاون  پر مبنی ایک ڈھانچہ تشکیل دیا جا رہا ہے جس سے عالمی مسائل کو حل کرنے میں مدد ملے گی۔


چین کے مقامی میڈیا کے مطابق امریکی جنرل جوزف ڈنفورڈ نے بیجنگ میں  چینی فوج کے سربراہ فانگ فنگ ہوئی سے ملاقات کی۔ملاقات کے بعد پریس کانفرنس میں دونوں سربراہان نے دوستانہ ماحول میں ہوئی گفتگو کا حوالہ دیتے ہوئے مشترکہ عسکری تعاون کی اہمیت پر زور دیا۔

چینی فوج کے سربراہ فانگ فنگ نے کہا کہ ہمیں امید ہے کہ امریکی فوج باہمی مفاہمت اور اعتماد کی فضا کو فروغ دینے اور ممکنہ خطرات سے نمٹنے کے لئے مل کر کام کرے گی۔ جس پر امریکی جرنیل نے کہا کہ تفصیہ طلب مسائل میں تعاون ضروری ہے اور امید ہے کہ اس میں مزید فروغ حاصل ہوگا۔

علاوہ ازیں تائیوان، جنوبی چین اور جزیرہ نما کوریا کو جوہری ہتھیاروں سے پاک کرنے میں بھی تعاون کا موضوع زیر غور لایا گیا۔امریکی جنرل ڈنفورڈ اپنے دورے کے سلسلے میں شمالی چین میں واقع فوجی اڈے پر منعقد کی جانے والی فوجی مشقوں کا بھی معائنہ کریں گی۔

نیوویب ڈیسک< News Source