روزانہ ایک کلو ریت کھانے والی 78 سالہ خاتون

روزانہ ایک کلو ریت کھانے والی 78 سالہ خاتون

بھارتی ریاست اترپردیش کے ضلع بنارس کی کسما وتی تقریباً ہر روز ایک کلو ریت کھاتی ہیں لیکن صحت پر کوئی اثر نہیں پڑتا۔


مقامی صحافی نے اس سلسلے میں کسما وتی اور ان کے اہل خانہ سے بات کی جنہوں نے بتایا کہ کسما وتی جب 15 برس کی تھیں تو ایک بار ان کے پیٹ میں درد ہوا تھا اور ایک طبیب نے انھیں گائے کے دودھ میں ریت ملا کر پینے کو کہا۔کسما وتی کی پیٹ کی پریشانی تو ٹھیک ہو گئی لیکن ریت میں نہ جانے کیسا ذائقہ تھا کہ انہیں اس کی عادت پڑ گئی۔

بنارس کے چولاپور بلاک کے کٹاری گاؤں کی رہنے والی کسماوتی آج 78 برس کی ہیں اور گزشتہ 63 برس سے ان کی یہ عادت جاری ہے۔اب ان کے پوتے پوتیاں بھی ہو چکی ہیں اور ان بچوں کی ذمہ داری اپنی دادی کے لیے ریت جمع کرنا ہے۔ کئی بار تو پڑوسی بھی انھیں ریت بطور عطیہ دے دیتے ہیں۔کسما وتی مکمل طور صحت مند ہیں۔ نہ تو وہ عینک پہنتی ہیں نہ ہی ان کی کمر جھکی ہے جبکہ وہ روزانہ کھیتی باڑی بھی کرتی ہیں۔