آرمی پبلک سکول حملے کے اہم سہولت کار اور دہشتگرد تاج محمد کو پھانسی دے دی گئی

آرمی پبلک سکول حملے کے اہم سہولت کار اور دہشتگرد تاج محمد کو پھانسی دے دی گئی

اسلام آباد :آرمی پبلک سکول حملے کے اہم سہولت کار اور دہشتگرد تاج محمد کو پھانسی دے دی گئی۔


تاج محمد مسلح افواج پر حملوں اور خودکش بمباروں کو پناہ دینے میں ملوث تھا۔تاج محمد کالعدم تحریک طالبان پاکستان کا سرگرم رکن تھا۔تاج محمد آرمی پبلک سکول پر حملے میں استعمال ہوا۔آرمی پبلک سکول پشاور پر حملے میں ملوث 4 دہشت گردوں کو کوہاٹ کی جیل میں دو دسمبر 2015ء کو تختہ دار پر لٹکایا گیا۔ 

دہشت گردوں میں مولوی عبدلاسلام۔ حضرت علی ، مجیب الرحمان عرف علی اور سبیل عرف یحیییٰ شامل تھے۔چاروں دہشت گردوں کو ملٹری کورٹ نے سزائے موت سنائی تھی۔یاد رہے سانحہ آرمی پبلک سکول کے پانچ سال گزر گئے، سانحے میں شہید ہونے والوں کے لواحقین آج بھی غم اور اداسی کی تصویر بننے ہوئے ہیں، دہشت گردوں کی جانب سے نشانہ بنانے والے آرمی پبلک سکول میں بچوں کے ساتھ شہید ہونے والے ان کے اساتذہ بھی شامل تھے ۔ 

ملک بھر میں آج سانحہ اے پی ایس کے شہدائے کی پانچویں برسی منائی جارہی ہے، 2014 میں آج ہی کی دن ظالم دہشت گردوں نے پشاور کے آرمی پبلک سکول میں خون کی ہولی کھیلی تھی۔ 16 دسمبر 2014 کی صبح دہشتگردوں نے پشاور میں واقع آرمی پبلک سکول میں داخل ہو کر خون ریزی اور بربریت کی وہ داستان رقم کی جس نے ہر انسان کو اشکبار کر دیا۔ آج اس سانحہ کو پانچ سال گزر گئے ہیں لیکن غم آج بھی تازہ ہیں۔ 

پشاورسمیت ملک بھر میں آج اے پی ایس شہداء کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے خصوصی تقریبات کا انعقاد کیا جارہا ہے۔ معیں بھی روشن کی جائے گی جبکہ شہدائے کے بلند درجات کیلئے فاتحہ خوانی و قرآن خوانی بھی کیجائیگی۔پشاور میں مرکزی تقریب آرمی پبلک سکول میں ہوگی جس میں عسکری احکام سمیت شہدا کے والدین شرکت کرینگے۔