ڈالر انٹربینک میں 6 روپے مہنگا، 127 کی بلند ترین سطح پر جا پہنچا

ڈالر انٹربینک میں 6 روپے مہنگا، 127 کی بلند ترین سطح پر جا پہنچا

ڈالر نے ایک بار پھر اڑان بھر لی ہے۔۔۔۔فائل فوٹو

کراچی: روپے کی قدر میں کمی کا سلسلہ کم نہ ہو سکا کیونکہ ڈالر نے ایک بار پھر اڑان بھر لی ہے۔ بڑھتا ہوا تجارتی خسارہ اور بگڑتا ہوا ادائیگیوں کا توازن روپے کی قدر پر اثرانداز ہونے لگا۔ یہی وجہ ہے کہ انٹر ببنک مارکیٹ میں ڈالر دوران ٹریڈنگ 6 روپے اضافے سے تاریخ کی بلند ترین سطح 127 روپے 50 پیسے پر ٹریڈ ہوتا ہوا نظر آیا۔

 

دوسری جانب اوپن مارکیٹ میں بھی ڈالر 4 روپے اضافے سے 128 روپے 20 میں ٹریڈ ہوا۔ ڈالر مہنگا ہونے سے صرف ایک ہی روز میں ملک پر قرضوں کا بوجھ 360 روپے تک بڑھ گیا۔ دسمبر سے اب تک ڈالر 20 روپے تک مہنگا ہوچکا ہے، جس کے باعث بیرونی قرضے بھی 1800 ارب روپے تک بڑھ چکے ہیں۔

خیال رہے کہ رواں ماہ 13 جولائی کو انٹر بینک میں روپے کے مقابلے ڈالر کی قیمت خرید 121.50روپے اور قیمت فروخت 121.60روپے پر بدستور برقرار رہی تاہم مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قدر 10 پیسے بڑھی تھی.

مزید پڑھیں: نواز شریف اور مریم نواز نے قید میں تیسری رات گزاری، جیل کا دورہ
 

جس سے ڈالر کی قیمت خرید 123.50 روپے سے بڑھ کر 123.60 روپے اور قیمت فروخت 124 روپے سے بڑھ کر 124.10 روپے تک  جا پہنچی تھی۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں