دبئی :  دبئی کے حکمران نے شیخ محمد بن راشد ال مکتوم کی صدارت میں کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں وزٹ ویزہ ، رہائشی ویزہ، فیملی ویزہ اور ویزہ میعاد ختم ہونے کے باوجود وہاں رہنے والے غیر ملکیوں کے لیے سہولیات دینے سے متعلق قانون منظور  کیا گیا ہے۔  

خلیج ٹائمز کی ایک رپورٹ کے مطابق، قانون ساز کابینہ نے ایک نیا قانون منظور کیا ہے جس میں موجودہ  رہائشی نظام کا جائزہ  اور تعلیم مکمل کرنے والے بچوں کے والدین کے ویزے کو  دوسال بڑھایا  گیا ہے۔   

ٹرانزٹ ویزا
1. ٹرانزٹ مسافروں کو پہلے 48 گھنٹوں کے لئے داخلہ فیس سے مکمل معافی دی گئی ہے.
2. ٹرانزٹ ویزا صرف Dh50  کی فیس کے ساتھ 96 گھنٹوں تک بڑھایا جا سکتا ہے.
3. ٹرانزٹ ویزا حاصل کرنے کے لۓ متحدہ عرب امارات کے ہوائی اڈوں کے پاس پاسپورٹ کنٹرول ہال میں سہولت دی جائے گی.
اسی طرح کابینہ نے مقررہ مدت سے زیاد رہنے والوں کو بھی موقع فراہم کیا ہے کہ وہ کسی پابندی کے بغیر یہاں سے جا سکتے ہیں۔

چھ ماہ کا ایک نیا ویزہ متعارف کروایا جا ئے گا جس سے اوور سٹے لوگ جو دبئی میں کام کرنا چاھتے ہیں وہ مستفید ہوں گے۔

عارضی ویزا متحدہ عرب امارات کی حیثیت کو مواقع اور پیشہ ورانہ صلاحیتوں کی حیثیت سے بہتر  ملک ثابت کرتا ہے.
ان افراد کو جو غیر قانونی طور پر متحدہ عرب امارات میں داخل ہوئے، دو سال کے لئے رضاکارانہ طور پر "نو انٹری" اسٹیمپ کے ساتھ چھوڑنے کا موقع ملے گا  جب وہ اپنا واپسی کا ٹکٹ فراہم کریںگے.
غیر ملکیوں پر مالی بوجھ کم کرنے کے لیے ان کو ملک سے باہر جا کر واپس آنے کی شرط کو بھی ختم کیا جائے گا تا کہ وہ وہیں وہ کر نیا ویزہ لے لیں اور کم پیسوں میں یہ ویزہ انہیں مل جائے گا۔