گالیا ں دینے والے صاف دل و ایماندار ہوتے ہیں، تحقیق

لندن : اکثر لوگوں میں گالیاں دینے کی بری عادت ہوتی ہے جسے ہر کوئی ناپسند کر تا ہے لیکن حیران کن بات یہ ہے کہ گالیاں دینے والے افراد میں ایک بہت اچھی خوبی پائی جاتی ہے۔

گالیا ں دینے والے صاف دل و ایماندار ہوتے ہیں، تحقیق

لندن : اکثر لوگوں میں گالیاں دینے کی بری عادت ہوتی ہے جسے ہر کوئی ناپسند کر تا ہے لیکن حیران کن بات یہ ہے کہ گالیاں دینے والے افراد میں ایک بہت اچھی خوبی پائی جاتی ہے۔

جی ہاں!حالیہ تحقیق میں انکشاف کیا گیا ہے کہ زیادہ گالیاں دینے والے زیادہ ایماندار اور صاف دل کے مالک ہوتے ہیں۔انگلینڈ کی کیمبرج یونیورسٹی میں جانے والی تحقیق 276 افراد اور ان کی گالیاں دینے کی عادات کا مطالعہ کیا گیا۔ لوگوں سے ان کی پسندیدہ گالی کے بارے میں پوچھا گیا اور پوچھا گیا کہ وہ کب ان کا استعمال کرتے ہیں۔بعد ازاں ان سے پوچھا گیا کہ وہ اپنی غلطی کا الزام دوسروں پر دھرتے ہیں، کھیل میں بے ایمانی کرتے ہیں اور دوسروں کا فائدہ اٹھاتے ہیں۔ان تمام معلومات کا تجزیہ کرنے کے بعد سائنس دانوں نے نتیجہ اخذ کیا کہ زیادہ گالیاں دینے والے افراد جھوٹ بہت کم بولتے ہیں۔

ڈیلی میل کو دئے گئے انٹرویو میں محقق اسٹیل ویل کا کہنا تھا کہ ± اسے دو طرح سے دیکھ سکتے ہیں، ایک تو یہ کہ زیادہ گالیاں دینا ایک منفی سماجی روہ ہے، جبکہ دوسری طرف دیکھا جائے تو ایسے لوگ اپنے الفاظ کو فلٹر نہیں کرتے اس لئے ان میں من گھڑت کہانیوں کا موقع بھی کم ہوتا ہے۔ الفاظ کی زیادہ آمیزش اور ان کو چھاننے سے سچ بدل جاتا ہے۔