بھارتی سیاستدان کو نوجوان نے جوتا دے مارا

بھارتی سیاستدان کو نوجوان نے جوتا دے مارا

تامل ناڈو: سیاستدانوں کو جوتا مارنا کوئی نئی بات نہیں ہے ۔آئے روز  کسی نہ کسی سیاستدان کو جوتا پڑھ جاتا ہے ۔ آج بھی کچھ ایسا ہی واقعہ بھارت میں پیش آیا جب بھاتیہ جنتا پارٹی کے وفاقی وزیر کو ایک نوجوان نے جوتا دے مارا ۔


وفاقی وزیر کا تعلق بھارتی ریاست تامل ناڈو سے ہے ۔سیاسی رہنما پون رادھا کرشنن کو ان کے آبائی علاقے میں ایک نامعلوم شہری نے جوتا پھینک مارا۔

پون رادھا کرشنن دہلی کی جواہر لال نہرو یونیورسٹی میں خودکشی کرنے والے نوجوان متوکرشنن پون کی آخری رسومات میں شرکت کے لئے تامل ناڈو پہنچے تھے اور ضلع سیلم میں عوام سے خطاب کررہے تھے کہ اسی دوران نوجوانوں کے مشتعل ہجوم نے ان کے خلاف نعرے بازی شروع کردی اور ایک نامعلوم شخص نے ان پر جوتا پھینک مارا اور فرار ہوگیا۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق پولیس نے جوتا مارنے والے شخص کو گرفتار کرلیا ہے اور اب اس سے تفتیش کی جارہی ہے کہ اس نے جوتا کیوں پھینکا تھا