اسلام آباد: وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے خلاف آمدن سے زائد اثاثے بنانے کے نیب ریفرنس کی سماعت آج ہو گی۔ استغاثہ کے 28 میں سے چوتھے گواہ کا بیان قلمبند کیا جائے گا۔

احتساب عدالت اسلام آباد کے جج محمد بشیر ملزم اسحاق ڈار کیخلاف اثاثہ جات ریفرنس کی سماعت کریں گے۔ جہاں استغاثہ کے گواہ مسعود غنی کا بیان قلمبند کیا جائے گا۔ گواہ کا تعلق اسلام آباد کے نجی بنک سے ہے۔ وزیر خزانہ آج پانچویں مرتبہ احتساب عدالت کے سامنے بطور ملزم پیش ہونگے۔

بیان قلمبند ہونے کے بعد وکیل صفائی خواجہ حارث گواہ پر جرح کریں گے۔ آٹھ گھنٹوں پر مشتمل طویل گزشتہ سماعت پر بھی دو گواہوں کے بیانات قلمبند کیے گئے تھے۔ 27 ستمبر کو اسحاق ڈار پر فرد جرم عائد ہونے کے بعد ٹرائل کے آغاز سے اب تک قومی سرمایہ کاری ٹرسٹ کے شاہد عزیز اور لاہور کے دو نجی بینکوں کے افسران اشتیاق علی اور طارق جاوید بطور گواہ اپنے بیانات قلمبند کروا چکے ہیں۔

اسحاق ڈار پر الزام ہے کہ ان کے اثاثوں میں مختصر وقت میں 91 گناہ اضافہ ہوا اور فرد جرم میں کہا گیا ہے کہ ملزم نے اثاثے کرپشن کے پیسوں سے بنائے۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں