زیادہ پھل کھائیں اور موٹاپا دور بھگائیں

زیادہ پھل کھائیں اور موٹاپا دور بھگائیں

لندن: اگر آپ جسمانی وزن کم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں تو اسٹرابری یا سیب کا استعمال زیادہ شروع کر دیں اس سے طویل المعیاد عرصے کے لیے فائدہ حاصل ہوتا ہے۔ یہ بات امریکا میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آئی جو طبی جریدے برٹش میڈیکل جرنل میں شائع ہوئی۔ ہاورڈ میڈیکل اسکول کی تحقیق میں کہا گیا ہے کہ ہو سکتا ہے کہ جسمانی وزن میں کمی کے لیے یہ بات عجیب لگے مگر زیادہ کھانا ہی اس کی کنجی ہے۔ محققین کا کہنا ہے کہ جو چیز زیادہ کھانی چاہئے وہ پھل ہیں جو وزن میں اضافے کی روک تھام کرتے ہیں چاہے وہ بہت زیادہ ہی کیوں نہ کھا لیے جائیں۔


محققین کے مطابق اس کی وجہ پھلوں میں پائے جانے والا قدرتی جز فلیونوئڈز ہے جو جسمانی وزن میں کمی کے لیے اہم ہے۔ اس تحقیق کے دوران ایک لاکھ سے زائد افراد میں 25 سال کے عرصے تک فلیونوئڈز کے اثرات کا جائزہ لیا گیا جس سے معلوم ہوا کہ اسٹرابریز، سیب، ناشپاتی اور مالٹوں میں پائے جانے والا یہ جز زبردست اثرات مرتب کرتا ہے جبکہ چائے اور پیاز بھی فائدہ مند ثابت ہوتے ہیں۔

روزانہ ان کا ایک اضافی حصے کا استعمال 4 سال کے دوران 100 گرام وزن کم کرتا ہے اور اگر 5 سال تک اس معمول کو برقرار رکھا جائے تو وزن میں آدھا کلو سے زیادہ کمی کی جا سکتی ہے۔ محققین کا کہنا ہے کہ کچھ مقدار میں بھی جسمانی وزن میں کمی صحت کو بہتر بناتی ہے اور ذیابیطس، کینسر، بلڈ پریشر اور شریانوں کے امراض کا خطرہ کم ہوتا ہے۔ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ جو لوگ زیادہ پھل یا سبزیوں کا استعمال نہیں کر سکتے وہ سیب، ناشپاتی یا بیریز کی کچھ مقدار کو کھانا عادت بنا لیں تو وہ یہ فوائد حاصل کر سکتے ہیں۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں