سعودی باپ نے اللہ کی رضا کے لیے دو بیٹوں کے قاتل کو معاف کردیا

سعودی باپ نے اللہ کی رضا کے لیے دو بیٹوں کے قاتل کو معاف کردیا

ریاض :سعودی عرب میں ایک غم زدہ نے اپنے دو بیٹوں کے قاتل کو محض اللہ کی رضا اور خاندان کے اتحاد کی خاطر معاف کردیا ہے اور ان کا خون بہا بھی نہیں لیا۔میڈیارپورٹس کے مطابق سعودی شہری سعد محمد عبداللہ المنصور الشاہرانی کے دو بیٹوں کو چھے ماہ قبل ان کے کزن اور بہنوئی ہی نے قتل کردیا تھا۔انھوں نے ایک بیان میں کہاکہ قاتل میرے چچا کا پوتا اور میری بیٹی کا خاوند ہے۔


اس نے ایک تنازع پر فائرنگ کرکے میرے 28 سالہ بڑے بیٹے اور 26 سالہ منجھلے بیٹے کو قتل کردیا تھا اور ان کے چھوٹے بھائی کو زخمی کردیا تھا۔انھوں نے بتایا کہ قریبی خاندانی تعلقات کی بنا پر یہ کیس میرے لیے بڑے صدمہ کا سبب تھا۔جب قاتل کے باپ اور میرے چچا زاد بھائی کو پولیس نے گرفتار کیا تو میں افسردہ ہوگیا اور میں نے بہ ذات خود اپنے اس بھائی کی ضمانت کے لیے رقم ادا کی تھی کیونکہ اس کو اس کے بیٹے کے ج±رم کا قصور وار قرار نہیں دیا جانا چاہیے تھا۔

اس سعودی باپ نے وضاحت کی کہ ہمارے قبیلے کے سردار اور زعماءمیرے کے پاس آئے تھے اور انھوں نے قاتل کو معاف کرنے کے لیے کہا تھا۔میں ان کی گفتگو سے متاثر ہوا اور میں نے اپنے بیٹوں کے قاتل کو اللہ کی رضا کی خاطر معاف کردیا ہے۔