بیکنگ سوڈا کے 9حیران کردینے والے کام

بیکنگ سوڈا کے 9حیران کردینے والے کام

بیکنگ سوڈا کے 9حیران کردینے والے کام

لندنبہت کم لوگوں کو ہی معلوم ہے کہ یہ بظاہر معمولی چیز آپ کے ہزاروں روپے بچانے میں مددگار ہوسکتی ہے اور اس کا ایسے طریقوں سے استعمال کیا جاسکتا ہے جو آپ کو دنگ کرکے رکھ دیں گے۔


ڈیوڈرنٹ

 بیکنگ سوڈا جسم سے اٹھنے والی بو کو دور کرنے کی قدرتی صلاحیت رکھتا ہے، بیکنگ سوڈا ایسے ایسڈز اور اجزاءکی سطح معمول پر لاتا ہے جو پسینے سے خارج ہوکر بو کا باعث بنتے ہیں۔ یہ حساس جلد کے لیے بہترین ہے اور اس سے کپڑوں پر داغ بھی نہیں نکلتے۔ بس چار چمچ بیکنگ سوڈا کو ایک چمچ پانی میں ملائیں اور اس کو پیسٹ کی شکل دے دیں۔ اس پر اپنی پسند کے کسی تیل کے چند قطرے شامل کرکے ایک قدرتی مہک بھی تیار کی جاسکتی ہے۔ اس پیسٹ کی پتلی تہہ ہاتھ یا برش سے بغلوں میں لگایں، اس سے پورے دن جسم میں پسینے کے اخراج سے بو پیدا نہیں ہوگی۔

دانتوں کو جگمگائیں

بیکنگ سوڈا دانتوں کو جگمگانے کے لیے ایک قدرتی ذریعہ ہے، بس ٹوتھ برش کو بیکنگ سوڈا یں ڈبوئین اور نرمی سے دانتوں پر برش کریں، دو سے تین منٹ تک برش کو سرکل کی شکل میں گھمائیں اور پھر کلی کرکے عام ٹوتھ پیسٹ کا استعمال کریں۔ اس عمل کو ہفتے میں دو بار دہرانے سے آپ کو جلد نمایاں فرق نظر آئے گا۔

بالوں کی صفائی

بالوں میں اکثر کچرا جمع ہوجاتا ہے جو کہ دھونے کے بعد بھی پوری طرح صاف نہیں ہوتا، اس کے لیے بیکنگ سوڈا ایک آسان ذریعہ ثابت ہوتا ہے۔ ایک چمچ بیکنگ سوڈا اپنے شیمپو میں ملائیں، پھر سر کو عام معمول کی طرح دھولیں۔ آپ کو اپنے بال صاف، چمکدار اور پہلے کے مقابلے میں بنانا آسان لگے گا۔

دھوپ کی جلن سے بچاﺅ

بیکنگ پاﺅڈر کا ایک کپ نیم گرم پانی سے بھری بالٹی میں ڈال دیں اور پھر اس سے نہالیں۔ اس سے آپ کو فوری طور پر دھوپ کی تپش سے ہونے والی جلن یا تکلیف کم کرنے میں مدد ملے گی۔

پیروں کی بو سے نجات

اگر پیروں سے بو اٹھ رہی ہے یا تھکاوٹ کے باعث انگلیاں درد کررہی ہیں تو اپنے پیروں کو ٹھنڈے پانی سے بھرے کسی برتن میں ڈال دیں اور اس پر کچھ مقدار میں بیکنگ سوڈا چھڑک کر پندرہ سے بیس منٹ تک ڈوبا رہنے دیں۔ پھر پیروں کو دھو کر خشک کرلیں، اس سے پیروں کی بو بھی دور ہوجائے گی اور پیروں میں تکلیف ہے تو اس کی شدت میں بھی کمی آجائے گی۔

کیل مہاسوں کو دور بھگائیں

بیکنگ سوڈا کیل مہاسوں سے نجات کا سستا ترین ذریعہ ہے، اسے پانی میں ملا کر ایک گاڑھا پیسٹ بنالیں، اس کے بعد کان کی صفائی والی سلائی یا کیو ٹپ کو استعمال کرکے اس پیسٹ کو کیل مہاسوں پر لگائیں اور رات بھر کے لیے چھوڑ دیں۔

جسمانی صفائی

نہانے سے قبل آدھا کپ بیکنگ سوڈا پانی کی بالٹی میں ملا کر اسے ہلائیں، یہ بیکنگ سوڈا جسم پر جمنے والے آئل اور دیگر مواد کو صاف کرتا ہے جبکہ جلد میں موجود ایسڈز کو متوازن کرتا ہے اور جلد کی خارش سے بھی آرام دلاتا ہے۔

چہرے کی صفائی

ایک چمچ بیکنگ سوڈا کو ایک چمچ خام شہد میں ملائیں، اس مکسچر کا چہرے پر نرمی سے مساج کریں اور دو منٹ کے لیے چھوڑ دیں اور پھر گرم پانی سے دھولیں۔

ہاتھ کی جلد کو نرم بنانا

اکثر ہاتھوں یا پیروں میں کچھ جگہیں ابھر کر سخت ہوجاتی ہیں اور بدنما لگتی ہیں، دو چمچ بیکنگ سوڈا ایک ڈونگے گرم پانی میں ملائیں اور پانچ منٹ کے ہاتھ یا پیر اس میں ڈبو دیں۔ اس کے بعد اس جگہ کو خشک کرکے ساٹھ فیصد بیکنگ سوڈا، بیس فیصد پانی اور بیس فیصد براﺅن شوگر سے بنے ایک پیسٹ سے رگڑیں۔ اس کے بعد موئسچرائزر لگا کر پانچ منٹ کے لیے ہاتھ یا پیر کو صاف تولیے میں لپیٹ کر رکھیں۔