بھارتی ماڈل عرشی خان نے اپنے جسم کے نازک اعضا پر پاکستانی پرچم پینٹ کرالیا

بھارتی ماڈل گرل عرشی خان کا ہے جس نے پہلے شاہد آفریدی پر الزامات لگا کر شہرت حاصل کی لیکن اس کے باوجود بھی اسے کوئی کام نہ ملا تو انتہائی گھٹیا حرکت کرتے ہوئے ایک بیہودہ فوٹو شوٹ کرادیا جس میں اپنے جسم کے نازک اعضا پر پاکستانی پرچم پینٹ کرالیا۔

بھارتی ماڈل عرشی خان نے اپنے جسم کے نازک اعضا پر پاکستانی پرچم پینٹ کرالیا

ممبئی : بھارتی ماڈل گرل عرشی خان کا ہے جس نے پہلے شاہد آفریدی پر الزامات لگا کر شہرت حاصل کی لیکن اس کے باوجود بھی اسے کوئی کام نہ ملا تو انتہائی گھٹیا حرکت کرتے ہوئے ایک بیہودہ فوٹو شوٹ کرادیا جس میں اپنے جسم کے نازک اعضا پر پاکستانی پرچم پینٹ کرالیا۔عرشی خان نے گزشتہ سال ٹی 20 ورلڈ کپ کے دوران بھی ایسا ہی ایک بیہودہ فوٹو شوٹ کرایا تھا جس میں اپنے جسم کے نازک اعضا پر پاکستانی اور انڈین جھنڈے پینٹ کرائے تھے لیکن اب اس نے ہدایتکار منیش سنگھ کی نئی آنے والی فلم ” گرین ٹیرر“ کیلئے بھی اسی قسم کا ایک بیہودہ فوٹو شوٹ کرایا ہے جس میں اس نے اپنے نازک اعضا پر پاکستانی پرچم پینٹ کرایا ہے۔


ذرائع کا کہنا ہے کہ عرشی خان کی یہ تصاویر ایک فوٹو گرافر نے فیس بک پر لیک کی ہیں تاہم یہ تو صرف ٹریلر ہے کیونکہ اسی فوٹو شوٹ میں ماڈل نے مکمل طور پر برہنہ ہو کر بھی تصویریں کھنچوائی ہیں۔ فلم ” گرین ٹیرر“ میں عرشی خان ایک پاکستانی دہشتگرد خاتون کا کردار نبھا رہی ہیں جو انڈین فوجیوں کے ساتھ جسمانی تعلقات قائم کرکے انتہائی خفیہ نوعیت کی معلومات نکلواتی ہے۔گزشتہ سال منیش سنگھ نے متنازعہ پاکستانی ماڈل قندیل بلوچ کے ساتھ فلم بنانے کا اعلان کیا تھا تاہم پاکستان اور انڈیا کے حالات میں تناؤ اور قندیل بلوچ کے قتل کے باعث وہ یہ فلم شروع ہی نہ کرسکے جس کے بعد انہوں نے عرشی خان کو فلم میں کاسٹ کرنے کا فیصلہ کیا۔ 

منیش سنگھ نے عرشی خان کے اس بیہودہ فوٹو شوٹ کے بارے میں تبصرہ کرنے سے انکار کردیا ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم نے فلم کیلئے اس قسم کا کوئی فوٹو شوٹ نہیں کیا، ہاں البتہ ایک متنازعہ قسم کا پوسٹر ضرور بنوایا ہے لیکن ان تصاویر کا اس پوسٹر سے کوئی تعلق نہیں ہے۔