مسلم مخالف پوسٹ، اسرائیلی وزیراعظم کے بیٹے کا فیس بک پیج بند

مسلم مخالف پوسٹ، اسرائیلی وزیراعظم کے بیٹے کا فیس بک پیج بند
یائر نیتن یاہو نے لکھا تھا کہ مشرق وسطی میں امن اُسی وقت آ سکتا ہے جب تمام مسلمان یہاں سے چلے جائیں۔۔۔۔فوٹو/ سوشل میڈیا

یروشلم: مسلم مخالف پوسٹ کرنے پر سماجی رابطے کی ویب سائٹ فیس بک نے اہم اقدام کرتے ہوئے اسرائیلی وزیراعظم بینجمن نیتن یاہو کے بڑے بیٹے یائر نیتن یاہو کا فیس بک پیج 24 گھنٹے کے لیے معطل کر دیا۔


گذشتہ ہفتے 2 اسرائیلی فوجیوں کی ہلاکت کے تناظر میں یائر نیتن یاہو نے فیس بک پر لکھا تھا کہ مشرق وسطی میں امن اُسی وقت آ سکتا ہے جب تمام مسلمان یہاں سے چلے جائیں جس پر فیس بک نے اسے آمریت پسندانہ سوچ قرار دیتے ہوئے یہ پوسٹ ڈیلیٹ کر دی تھی۔

جس کے بعد اتوار کو یائر نیتن یاہو نے اپنی ڈیلیٹ کی گئی پوسٹ کا اسکرین شاٹ فیس بک پر پوسٹ کیا اور ویب سائٹ پر شدید تنقید کی جس کے بعد ان کا اکاؤنٹ 24 گھنٹے کے لیے معطل کر دیا گیا۔

اس حوالے سے رابطہ کرنے پر فیس بک کی جانب سے کوئی ردعمل سامنے نہیں آیا۔واضح رہے کہ یائر نیتن یاہو اپنی سوشل میڈیا پوسٹس اور شاہانہ اخراجات کی بناء پر اکثر تنقید کی زد میں رہتے ہیں۔