کیپٹن صفدر کی ضمانت منسوخ کئے جانے کی درخواست،لاہور ہائیکورٹ نے فیصلہ سنادیا

کیپٹن صفدر کی ضمانت منسوخ کئے جانے کی درخواست،لاہور ہائیکورٹ نے فیصلہ سنادیا

لاہور:سابق وزیراعظم نوازشریف کے داماد اور مریم نوازکے شوہر کیپٹن (ر)صفدر کی ضمانت منسوخ کئے جانے کی درخواست پر لاہور ہائیکورٹ نے فیصلہ سنادیاہے۔ہائیکورٹ نے کیپٹن (ر) صفدر کی ضمانت منسوخی کی درخواست کو ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے مسترد کردیا ہے۔


میڈیا رپورٹس کے  مطابق ڈپٹی پراسیکیوٹرجنرل نے کیس کی سماعت ملتوی کرنے کی درخواست کی جس پر عدالت نے کہا نہیں ملتوی نہیں ہوگی ابھی بتائیں فیصلہ کردیتے ہیں، ابھی تک تواس میں نوٹس بھی نہیں ہوئے آپ دلائل دیں ہم اس کا فیصلہ کردیتے ہیں۔

س دوران ڈپٹی پراسیکیوٹرجنرل نے دلائل دیئے کہ کیپٹن صفدرنے سیشن کورٹ میں ریاستی اداروں کیخلاف بات کی، ان کی میڈیا سے گفتگوقابل اعتراض ہے، جس پر عدالت نے کہاآپ کہتے ہیں کیپٹن (ر)صفدر نے حکومت کے خلاف احتجاج کیا ، حکومت خودبھی احتجاج کرتی رہی کیا اس کے خلاف بھی پرچہ دیناچاہئے۔

ڈپٹی پراسیکیوٹرجنرل نے مزید کہا کہ احتجاج پر اعتراض نہیں مگر قانونی دائرہ کار میں رہ کر کیا جانا چاہئے، سرکاری وکیل کا کہنا تھاکہ کیپٹن صفدر نے مریم کی پیشی پر پولیس اہلکاروں سے ہاتھا پائی بھی کی۔لاہور ہائی کورٹ نے کیپٹن صفدر کی ضمانت منسوخی کی درخواست ناقابل سماعت قرار دے کر مسترد کردی۔

گزشتہ سماعت پرسرکاری وکیل نے تیاری کیلئےمہلت طلب کی تھی ، پنجاب حکومت کی جانب سے درخواست میں کہا گیا تھا کہ کیپٹن(ر)صفدر نے مریم کی پیشی پر پولیس اہلکاروں سے ہاتھاپائی کی، جس کے بعد ان کےخلاف ہنگامہ آرائی اورکارسرکارمیں مداخلت کامقدمہ درج کیاگیا تھا۔