نیویارک:کہتے ہیں کہ دنیا عجوبوں سے بھری پڑی ہے ۔ روز ایک نئے عجوبے کی خبر دیکھنے اور سننے کو ملتی ہے ۔ایسی ہی عجوبہ خبر یہ ہے کہ امریکا کے لیوک اور ہیلری گارڈرنز کاور ان کے بیٹے کی پیدائش کا دن ایک ہی ہے ۔ ماں، باپ اور بچے، تینوں کی سالگرہ کا دن ایک ہے اور یہ ایسا اتفاق ہے جس کا امکان ایک لاکھ 33 ہزار میں سے صرف ایک فیصد ہوتا ہے۔

ویسے اس جوڑے کا بالکل بھی ارادہ نہیں تھا کہ ان کا بچہ بھی 18 دسمبر کو پیدا ہو، یعنی اُس دن جب یہ دونوں اپنی سالگرہ مناتے ہیں۔

امریکی ریاست مسیسپی سے تعلق رکھنے والے میاں بیوی خود اس اتفاق پر اب تک حیران ہیں۔

لیوک کے مطابق 'ہم نے تو ایسا اُس وقت تک نہیں سوچا تھا جب تک ہیلری حاملہ نہیں ہوئی، اس وقت ہمیں اس بات کا احساس ہوا اور ہم دنگ رہ گئے'۔

ایک اسمارٹ فون ایپ کے ذریعے انہوں نے اندازہ لگایا کہ ان کے بچے کی پیدائش 15 سے 19 دسمبر کے درمیان متوقع ہے۔

یہی وجہ ہے کہ اس جوڑے نے بچے کو 18 دسمبر کو دنیا میں لانے کے لیے 17 دسمبر کی رات سے ہی کوشش شروع کردی، 'ہم چہل قدمی کے لیے چلے گئے اور دیر تک باہر گھومتے رہے'۔

اور یہ کوشش رائیگاں نہیں گئی اور یہ بچہ بھی اپنے والدین کی تاریخ پیدائش کے دن صبح 10 بجے دنیا میں آیا۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ ہیلری اپنے شوہر سے چھ گھنٹے بڑی ہیں، جن کی پیدائش 18 دسمبر 1989 کو صبح 8 بج کر 10 منٹ پر ہوئی جبکہ لیوک کی پیدائش 2 بج کر 10 منٹ پر ہوئی۔

یہ دونوں اب مذاق میں کہتے ہیں کہ اگر مزید بچے ہوئے تو ان کی کوشش ہوگی کہ وہ بھی دسمبر میں ہی پیدا ہوں۔