فوجی عدالتوں میں توسیع کیلئے پارلیمانی جماعتوں کا اجلاس پھر بے نتیجہ رہا

فوجی عدالتوں میں توسیع کیلئے پارلیمانی جماعتوں کا اجلاس پھر بے نتیجہ رہا

 اسلام آباد: اسپیکرقومی اسمبلی کی زیرصدارت پارلیمانی رہنماؤں کا اجلاس بے نتیجہ ختم ہو گیا . اجلاس میں کوئی پیش رفت نہ ہو سکی . 31 جنوری کو دوبارہ اجلاس بلا یا  لیا گیا ہے. فوجی عدالتوں کے مستقبل کے حوالے سے پارلیمانی راہنماوں کا اجلاس ایک بار پھر بے نتیجہ ختم ، اپوزیشن جماعتوں نے مزید سوالات اٹھا دیے.  نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد کے حوالے سے وزیر داخلہ کے بریفنگ نہ دینے پر بھی اپوزیشن نے تحفظات کا اظہار کر دیا۔

فوجی عدالتوں کے مستقبل کے حوالے سے پارلیمانی جماعتوں نے آج پھر اسپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق کی سربراہی میں سر جوڑے ، حکومت نے تفصیلی بریفنگ دی لیکن اپوزیشن نے مزید سوالات کھڑے کر دیے۔ اپوزیشن جماعتوں نے نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد مدارس اور عدالتی اصلاحات پر مزید تفصیلات مانگ لیں۔ اجلاس میں تمام جماعتوں نے فوجی عدالتوں کو ریاستی معاملہ قرار دیتے ہوئے اس پر سیاست نہ کرنے کی یقین دہانی کرائی۔ اجلاس میں وزیر داخلہ کی بعدم شرکت اور نیشنل ایکشن پلان پر بریفنگ نہ دینے پر اپوزیشن نے شدید تحفظات کا اظہار بھی کیا۔