آئندہ برس ساڑھے پانچ ہزار ارب روپے اکٹھے کرنے کا ہدف ہے :وزیر اعظم عمران خان

آئندہ برس ساڑھے پانچ ہزار ارب روپے اکٹھے کرنے کا ہدف ہے :وزیر اعظم عمران خان
image by facebook

اسلام آباد : وزیراعظم عمران خان نے مدینہ کی ریاست میں عدم و انصاف اور رحم ہوتا ہے ، جن معاشروں نے ترقی کی وہاں سب کے لیے یکساں قانون ہے ، میرا جینا مرنا پاکستان کے لیے ہے ، میری پاکستان سے باہر کوئی جائیداد نہیں ہے ، منی لانڈرنگ کرنے والوں کے مفادات کچھ اور ہیں ۔


تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے تاجر برادری سے خطاب کے دوران کہا کہ 22کروڑ عوام میں سے صرف 15لاکھ لوگ ٹیکس دیتے ہیں ، ہم سے مطالبہ کیا گیا کہ پیسے جتنے مرضی لے لیں لیکن ٹیکس نیٹ میں شامل نہ کریں ، پاکستان کو عظیم ملک بنانے جا رہے ہیں .

لوگ الیکشن کے لیے اسلام کی بات کرتے ہیں ، میں نے الیکشن جیتنے کے بعد مدینہ کی ریاست کی بات کی ، طاقتور اور کمزور کے لیے الگ الگ قانون ہو تو جینا مشکل ہو جاتا ہے ، تاجر برادری نے شوکت خاتم ہسپتال کے قیام میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا ہے ، پاکستان اب ویسے نہیں چلے گا جیسے اس کو چلایا جا رہا تھا.

انھوں نے کہا کہ اسمگلنگ روکے بغیر انڈسٹری کو آگے نہیں بڑھا سکتے ہیں ، آئندہ سال ساڑھے پانچ ہزار ارب روپے اکٹھے کرنے کا ہدف ہے ۔پاکستان کا 70فیصد ٹیکس صرف 300کمپنیاں دیتی ہیں ۔ٹیکس کے معاملے پر پیچھے ہٹوں گا تو قوم سے غداری ہوگی ۔انھوں نے کہا کہ تاجروں کے ایف بی آر کے متعلق مسائل حل کریں گے ۔ایف بی آر میں 700ارب روپے کی چوری ہوتی تھی ۔