وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کو چینی ہم منصب کا ٹیلی فون، داسو بس واقعے پر بات چیت

وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کو چینی ہم منصب کا ٹیلی فون، داسو بس واقعے پر بات چیت
سورس: فوٹو: بشکریہ ٹوئٹر

اسلام آباد: وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کو چینی ہم منصب نے فون کیا اور داسو بس واقعے پر بات چیت کی اور حادثے میں اب تک ہونے والی تحقیق پر پیش رفت سے متعلق تبادلہ خیال کیا گیا۔ 

تفصیلات کے مطابق وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کو چین کے وزیر برائے پبلک سیکیورٹی زاؤ کیذہی (Mr. Zhao Kezhi) نے ٹیلیفون کیا اور داسو ہائیڈرو پاور بس حادثے سے متعلق بات چیت کی۔ دونوں وزراءکے درمیان ٹیلی فون پر بات چیت آدھے گھنٹے سے زائد جاری رہی اور حادثے میں اب تک ہونے والی تحقیق سے متعلق پیش رفت پر تبادلہ خیال کیا۔

وزیر داخلہ نے بدقسمت بس حادثے میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے تحقیقات جلد از جلد مکمل کرنے پر اتفاق کیا، دونوں وزراءنے عزم کیا کہ کوئی بھی شرپسند طاقت پاکستان اور چین کے تعلقات کو خراب نہیں کر سکتی۔

وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے چینی ہم منصب کو یقین دہانی کرائی کہ پاکستان آزمودہ دوست اور آہنی بھائی ہیں، وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر بس حادثے کی تحقیقات اعلی ترین سطح پر جاری ہیں اور بہت جلد تحقیقات مکمل کرلیں گے، چینی تحقیقاتی ٹیم کو مکمل تعاون فراہم کر رہے ہیں، پاکستان میں کام کرنے والے تمام چینی ورکرز کو فول پروف سیکیورٹی دیں گے۔ 

چینی وزیر زاؤ کیذہی نے بتایا کہ چینی صدر شی جن پنگ کی ہدایت پر آپ سے بس حادثے پر کال کررہا ہوں، بس حادثے میں دونوں ملکوں کے شہریوں کی جانوں کے ضیاع پر بہت افسوس ہے۔