حمزہ شہباز کو وزارت اعلیٰ سے ہٹانے کیلئے دائر درخواستوں کی سماعت کرنے والا بنچ تبدیل

حمزہ شہباز کو وزارت اعلیٰ سے ہٹانے کیلئے دائر درخواستوں کی سماعت کرنے والا بنچ تبدیل

لاہور: لاہور ہائیکورٹ میں وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز شریف کو عہدے سے ہٹانے کیلئے دائر درخواستوں کی سماعت کرنے والا بنچ تبدیل ہو گیا ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس امیر بھٹی کی منظوری کے بعد حمزہ شہباز شریف کو عہدے سے ہٹانے کیلئے دائر درخواستیں جسٹس شجاعت علی خان کی عدالت سے جسٹس شاہد وحید کی عدالت ٹرانسفر کر دی گئی ہیں اور اب جسٹس شاہد وحید ان درخواستوں پر سماعت کریں گے۔ 

ذرائع کا کہنا ہے کہ جسٹس شاہد وحید 20 جون کو سپیکر پنجاب اسمبلی اور پاکستان مسلم لیگ (ق) کے رہنماءچوہدری پرویز الٰہی، سبطین خان سمیت دیگر کی درخواستوں پر سماعت کریں گے۔ 

مذکورہ درخواستوں میں حمزہ شہباز سمیت دیگر کو فریق بناتے ہوئے موقف اختیار کیا گیا ہے کہ وزارت اعلیٰ کا الیکشن متنازعہ تھا اور حمزہ شہباز کا انتخاب آئینی طریقہ کار کے مطابق نہیں ہوا جبکہ انہوں نے مطلوبہ ووٹ بھی حاصل نہیں کئے۔ 

درخواست میں مزید کہا گیا ہے کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں حمزہ شہباز کے پاس مطلوبہ نمبرز نہیں ہیں جبکہ ڈپٹی سپیکر نے حمزہ شہباز کو بلا جواز وزیراعلیٰ کے انتخاب میں کامیاب قرار دیا۔ 

درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ حمزہ شہباز شریف کا بطور وزیراعلیٰ حلف کالعدم قرار دیا جائے اور درخواست کے حتمی فیصلے تک حمزہ شہباز کو بطور وزیراعلیٰ پنجاب کام سے روکا جائے۔

مصنف کے بارے میں