اپوزیشن کے جائز مطالبات پر ان کے ساتھ چلیں گے، فواد چوہدری

اپوزیشن کے جائز مطالبات پر ان کے ساتھ چلیں گے، فواد چوہدری
اپوزیشن لیڈر پر مقدمات سے ترکی اور چائنہ سے تعلقات خراب نہیں ہوں گے، فواد چوہدری۔۔۔۔۔۔۔فائل فوٹو

اسلام آباد: وزیر اطلاعات فواد چودھری نے قومی اسمبلی میں اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن کے جائز مطالبات پر ان کے ساتھ چلیں گے۔ ان کی خواہش پر آج کا اجلاس طلب کیا گیا جس پر تقریباً 10 کروڑ روپے خرچ آئے گا۔ پی ٹی آئی کی حکومت ہرمسئلے پر پارلیمنٹ میں بحث کیلئے تیار ہے۔ چوروں، ڈاکوؤں کو پکڑنے کے بیان پر اپوزیشن نہ جانے کیوں پریشان ہو جاتی ہے۔


انھوں نے کہا کہ پہلی بار ریمانڈ پر کسی ممبر کے پروڈیکشن آرڈرجاری کیے گئے اور نیب کا موجودہ سیٹ اپ خورشید شاہ اور نواز شریف نے بنایا تاہم نیب میں پی ٹی آئی نے ایک چپڑاسی بھی بھرتی نہیں کرایا۔ چور اور ڈاکوؤں کو پکڑنے کے بیان پر اپوزیشن کیوں پریشان ہو جاتی ہے۔ اپوزیشن کو تلخ حقیقت برداشت نہیں ہو رہی اور اختلافات اپنی جگہ ہمیں آگے بڑھنا چاہیئے۔

فواد چودھری نے مزید کہا کہ ن لیگ کی سیاست کا آغاز ذوالفقار بھٹو کی پھانسی کے بعد ہوا اور مسلم لیگ ن نے سیاسی حریفوں پر مقدمے بنوائے۔ یہ لوگ تین، تین عشروں سے حکومت کر رہے ہیں اور جب بھی ہم کہتے ہیں کہ چوروں کو پکڑیں گے تو بعض لوگ فضول میں پریشان ہو جاتے ہیں۔ وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ اپوزیشن لیڈر پر مقدمات سے ترکی اور چائنہ سے تعلقات خراب نہیں ہوں گے۔

قبل ازیں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے قومی اسمبلی اجلاس سے تقریبا ڈیڑھ گھنٹہ خطاب کیا جس کے بعد پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما خورشید شاہ اور وزیر قانون فروغ نسیم نے بھی ایوان میں تقریر کی۔