وزیراعظم ہاؤس کی گاڑیوں کی نیلامی: 70 گاڑیاں فروخت

وزیراعظم ہاؤس کی گاڑیوں کی نیلامی: 70 گاڑیاں فروخت
فوٹو فائل

اسلام آباد: وزیراعظم ہاوٴس اسلام آباد کے زیر استعمال بم پروف گاڑیوں سمیت 102 قیمتی گاڑیوں کی نیلامی جاری ہے اب تک 70 گاڑیاں نیلام ہو چکی ہیں۔پہلی گاڑی کرولاالٹس 2010 ماڈل گیارہ لاکھ بیس ہزار میں فروخت ہوئی۔


تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے ایک اور وعدہ پورا کر دکھایا، کفایت شعاری مہم کا آغاز پہلے اپنے گھر سے وزیر اعظم ہاؤس کی ایک سو دو گاڑیاں نیلامی کیلئے پیش کردیں،  خریدار وزیر اعظم ہاؤس میں نیلامی کیلئے پیش کی گئی گاڑیوں کامعائنہ کر رہے ہیں۔

وفاقی وزیراطلاعات فواد چودہری نے پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اب تک 70 گاڑیاں فروخت ہو چکی ہیں۔ تمام گاڑیوں کو مارکیٹ سے زائد قیمت پر فروخت کیا گیا ہے۔وزیراعظم ہاؤس کے ایڈمنسٹریٹر کا کہنا تھا کہ گاڑیوں کی نیلامی تین مراحل میں کی جا رہی ہے۔ پہلے مرحلے میں 34 مقامی گاڑیوں کو نیلام کیا گیا، دوسرے مرحلے کی نیلامی میں امپورٹڈ گاڑیاں شامل کی گئیں۔

انتظامی افسر کے مطابق دوسرے مرحلے میں 16 گاڑیوں کی نیلامی نہیں ہو سکی۔ نیلام نہ ہونے والی گاڑیوں میں مرسڈیز بینز اور دو پانچ ہزار سی سی بی ایم ڈبلیو جیپیں شامل ہیں۔وزیراعظم ہاؤس کے ایڈمنسٹریٹر کا کہنا تھا کہ ٹیکس اور ڈیوٹی زیادہ ہونے کے باعث کچھ گاڑیوں کی نیلامی نہیں ہوئی، نیلام نہ ہونے والی گاڑیوں کے ٹیکسز اور ڈیوٹیز کا از سر نو جائزہ لیا جائے گا۔

وزیراعظم ہاؤس کی فروخت کے لیے پیش گاڑیوں سے متعلق شرائط میں کہا گیا تھا کہ نیلامی بند لفافہ میں دی گئی بڑی پیشکش سے شروع کی جائے گی اور سب سے زیادہ قیمت لگانے والا گاڑی کا مالک ہو گا۔حکام یہ بات بھی واضح کر چکے ہیں کہ گاڑی خریدنے والے کو اس پر عائد بھاری ٹیکس بھی ادا کرنا ہو گا۔ خریدار کو گاڑی کی بولی کے لیے دی گئی رقم کا دس فیصد ابتداء میں جب کہ باقی رقم سات روز میں ادا کرنا ہو گی جس کے بعد گاڑی حوالے کی جائے گی۔

خریداروں کا کہنا ہے کہ نیلامی کا عمل بہترین ہے، گاڑیوں کی قیمت مناسب ہے، گاڑی مہنگی بھی خریدی تو پیسہ قومی خزانے میں جانے کی خوشی ہوگی۔

نیلامی کے لئے پیش کی جانے والی گاڑیوں میں جدید ترین مرسڈیز، بلٹ پروف بی ایم ڈبلیوز لیموزین اور دس سال پرانی بہتر گاڑیاں شامل ہیں، خریدار کو گاڑی پر عائدتمام ٹیکسسز ادا کرنے ہوں گے۔

وزیراعظم ہاؤس کے لیے کابینہ ڈویژن کے پاس دوسو سے زائد گاڑیاں ہیں، پہلے مرحلے میں ایک سو دو گاڑیاں نیلام کی جائیں گی جبکہ بقیہ آئندہ نیلام کی جائیں گی۔نیلام کی جانے والی کئی گاڑیاں وزیراعظم اور غیر ملکی مہمانوں کے پروٹوکول کی ہیں۔

واضح رہے 31 اگست کو وزیر اعظم ہاؤس میں موجود اضافی غیرضروری گاڑیوں کی فوری فروخت کا فیصلہ کیا گیا تھا اور کہا گیا تھا کہ گاڑیوں کی نیلامی17ستمبر کو وزیراعظم ہاؤس میں ہوگی، پہلے مرحلے میں33گاڑیاں نیلام کی جائیں گی۔