مشرف کیخلاف فیصلہ آنے پر چوہدری شجاعت حسین نے خاموشی توڑ دی

مشرف کیخلاف فیصلہ آنے پر چوہدری شجاعت حسین نے خاموشی توڑ دی
Image Source : Twitter

لاہور :پاکستان مسلم لیگ ق کے رہنما اور سینئر سیاستدان چوہدری شجاعت حسین بھی مشرف کے حق میں کھل کر سامنے آگئے.


چوہدری شجاعت حسین نے مشرف کو سزائے موت دئیے جانے پر اپنا ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ اس فوجی پر کیا بیتے گی جب اسکے سپہ سالار کو غدار کہا جائے گا ،انہوں نے کہا کہ کسی بھی ملک کا آرمی چیف آسانی سے نہیں بنتا۔ مشرف ہو یا کوئی اور فوجی، جنرل کے عہدے تک پہنچنے کیلئے قابلیت، احساسات اور ملک و قوم سے محبت کے جذبات اس میں کوٹ کوٹ کر بھرتے ہوتے ہیں۔

ق لیگ کے صدر چوہدری شجاعت حسین نے کہا مشرف کو سزا سے سرحد پر کھڑے ہر سپاہی کو دکھ ہوا، ہمیں فوج کے اس سپاہی کے جذبات کی بھی تشویش ہونی چاہیے۔

چودھری شجاعت حسین کا کہنا تھا 1947ءسے آج تک ہزاروں مثالیں ملتی ہیں کہ ہمارے فوجی جوانوں نے ملک و قوم کی خاطر اپنی جانیں قربان کیں اور وطن عزیز کا دفاع کیا، کچھ لوگ اپنی جھوٹی اور جعلی قابلیت کی بنیاد پر عوام کو گمراہ کر رہے ہیں، فوج کے خلاف اپنے ڈرائنگ رومز اور ٹی وی شوز میں بیٹھ کر مباحثوں کے دوران وہ اپنی جھوٹی قابلیت کو اجاگر کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔