جارحانہ کھیل کو تیسرے میچ میں بھی جاری رکھیں گے، قائم مقام کپتان محمد حفیظ

پرتھ: آسٹریلیا کے خلاف ون ڈے سیریز ایک ایک سے برابر کرنے کے بعد  قومی شاہینوں نے تیسرا مقابلہ بھی جیتنے کے تیاریاں مکمل کر لیں ہیں۔ پاک آسٹریلوی ٹیمیں کل پرتھ کے واکا گراؤنڈ میں مدمقابل ہوں گی ۔پاکستان کرکٹ ٹیم کے قائم مقام کپتان محمد حفیظ کا کہنا ہے کہ آسٹریلیا کے خلاف پہلی ہار کے بعد دوسرے میچ میں جارحانہ کھیل کے لیے میدان میں آئے جس کو ہم اگلے میچ میں بھی جاری رکھیں گے۔ ہماری باولنگ میں کارکردگی کو دہرانے کی صلاحیت ہے۔جنید خان سمیت باولرز سے بہت توقعات ہیں۔ہم باونس اور پیس کے لیے تیار ہیں اور کسی بھی ٹیم کے خلاف بہتر کھیل پیش کرسکتے ہیں۔ باولر جو بھی ہوں آپ کا رویہ اور سوچ اثرانداز ہوتی ہے۔اگر ابتدائی وکٹیں نہ دیں تو ہم میچ جیت سکیں گے۔

پرتھ کے ویسٹرن آسٹریلیا کرکٹ ایسوسی ایشن (واکا) گرائونڈ میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نےمزید کہا کہ ہمیں ٹیم پر پورا اعتماد ہے، ہم بہت اچھی کرکٹ کھیل رہے ہیں اور گزشتہ دومیچوں میں باولرز نے ٹیم کے لیے بہترین کردار ادا کیا ہے۔محمد حفیظ نے کہا کہ ہماری باولنگ میں کارکردگی کو دہرانے کی صلاحیت ہے۔طویل عرصے تک ٹیم سے باہر رہنے والے فاسٹ باولر جنید خان نے دوسرے میچ میں واپسی کرتے ہوئے بہترین باولنگ کا مظاہرہ کیا تھا جس پر پوچھے گئے ایک سوال پر انھوں نے کہا کہ مجھے ذاتی طورپر یقین ہے اور بطور ٹیم ہم سمجھتے ہیں وہ کسی بھی کنڈیشن میں کارکردگی دکھانے کی صلاحیت رکھتے ہیں ان کے پاس تجربہ ہے اورانھوں نے پوری دنیا میں کرکٹ کھیلی ہے ۔

کپتانی کی دوڑ میں شامل ہونے کی بات کو رد کرتے ہوئے کہا کہ 'اس پر بات کرنا غیرضروری ہے ایسا کچھ نہیں کہ اس کے بارے میں سوچا جائے، ہمارے کپتان اظہرعلی ہیں اور ہم چاہتے ہیں کہ وہ جتنا ممکن ہو جلد واپس آجائے'۔محمد حفیظ نے کپتانی کے معاملے کو واضح کرتے ہوئے کہا کہ 'کپتان کوئی بھی ہو اس کی مدد اور حمایت کرنا بہت ضروری ہے، اظہر نے ویسٹ انڈیز کے خلاف بہترین کپتانی کی تھی اور اب ضرورت ہے کہ ہم مجموعی طورپر بہترین کارکردگی دکھائیں اور وہ کچھ حاصل کریں جو ہم ٹیم کے طورپر حاصل کرنا چاہتے ہیں۔

مصنف کے بارے میں