وہ جو کہتے تھے روک سکو تو روک لو،دیکھ لو ہم نے روک لیا،آج بھی میاں صاحب سے بڑا چابی والا کھلونا کوئی نہیں:بلاول بھٹو

وہ جو کہتے تھے روک سکو تو روک لو،دیکھ لو ہم نے روک لیا،آج بھی میاں صاحب سے بڑا چابی والا کھلونا کوئی نہیں:بلاول بھٹو
سکرین گریب

کوٹلی ستیاں:پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے کوٹلی ستیاں میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جب میاں صاحب ہار جاتے ہیں تو آپکے دل بھی ٹوٹ جاتے ہیں مایوسی بھی ہوتی ہے،وہ جو کہتے تھے روک سکو تو روک لو،دیکھ لو ہم نے روک لیا،آج بھی میاں صاحب سے بڑا چابی والا کھلونا کوئی نہیں،آج بھی نئی چابی لگادی جائے تو کھلوناضیاالحق کی چابی کی طرح گھومنے لگے۔


کوٹلی ستیا ں کے جلسے میں بلاول بھٹو نے تنقید کرتے ہوئے کہا کہ میاں صاحب سمجھتے ہیں جمہوریت ان کی جیت سے مشروط ہے،نواز شریف کہتے ہیں سینیٹ الیکشن میں ان کا دل ٹوٹ گیا ہے،آپ رضا ربانی کو اپنی لڑائی کے لئے ڈھال بنانا چاہتے تھے۔

چیئرمین پی پی پی نے مزید کہا کہ میاں صاحب آپ کب سے انقلابی بن گئے،آپ پیپلز پارٹی کے پیچھے چھپنا چاہتے تھے،ضیا الحق کے اوپننگ بیٹسمین کی ہار پر آپ کا دل تو ٹوٹنا تھا۔میاں صاحب، ہوش سے کام لیں ، آپ کن کو چابی والا کھلونا کہہ رہےہیں،آج بھی میاں صاحب سے بڑا چابی والا کھلونا نظر نہیں آتاہے،کیا یہ بھی اسٹیبلشمنٹ سے ملے ہوئے ہیں۔

سینیٹ الیکشن میں بلوچستان نے میاں صاحب پر عدم اعتماد کیا،مسئلہ یہ ہے کہ چابی کھلونے کے اندر ٹوٹ گئی ہے،چابی والے کھلونے کا نواز شریف سے زیادہ کسے پتا ہے،نواز شریف کی سیاست اسی چابی سے کھلتی اور بند ہوتی رہی ،میاں صاحب، آپ سازشی ہوسکتے ہو، آپ انقلابی نہیں ہوسکتے۔