ماں کا دودھ بچے کو کینسر سے بچاتا ہے ، تحقیق

لاہور : دنیا میں آتے ہی ماں کا دودھ بچے کی پہلی غذا ہے۔ ماں کا دودھ بچے کے لیے کسی نعمت سے کم نہیں یہ غذائیت سے بھرپور ہے جو نہ صرف بچے کی نشونما میں اہم کردار اداکرتا ہے بلکہ خطر ناک بیماری سے آپ کے بچے کو دور رکھتا ہے ۔ سویڈن میں کی گئی تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ ماں کے دودھ میں موجود ‘’ہیملٹ‘ نامی مادہ کینسر کے خلیات کو غیر موثر بنا دیتا ہے۔

ماں کا دودھ بچے کو کینسر سے بچاتا ہے ، تحقیق

لاہور : دنیا میں آتے ہی ماں کا دودھ بچے کی پہلی غذا ہے۔ ماں کا دودھ بچے کے لیے کسی نعمت سے کم نہیں یہ غذائیت سے بھرپور ہے جو نہ صرف بچے کی نشونما میں اہم کردار اداکرتا ہے بلکہ خطر ناک بیماری سے آپ کے بچے کو دور رکھتا ہے ۔ سویڈن میں کی گئی تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ ماں کے دودھ میں موجود ‘’ہیملٹ‘ نامی مادہ کینسر کے خلیات کو غیر موثر بنا دیتا ہے۔


لنڈ یونیورسٹی کی قوت مدافعت کی ماہر پروفیسر کیتھرینہ سوانبرگ نے کہا ہے کہ یہ دریافت انہوں نے اینٹی بائیوٹک پر تحقیق کے دوران کی ہے۔تحقیق کے مطابق ہیملٹ مادہ کینسر کے مریضوں کے جسم میں داخل ہونے کے بعد ٹیومر کے خاتمے میں اثرات دکھاتا ہے۔سوانبرگ نے کہا کہ ہیملٹ کے اثرات نہایت سحر انگیز ہیں اور ماں کے دودھ میں شامل’ الفالیکٹل بومین‘ نامی پروٹین حلق میں پہنچنے پر کینسرکے خلاف جدوجہد کرنے والے ایجنٹ کی شکل اختیار کر جاتا ہے۔