پانامہ کے ساتھ بہتر تعلقات چاہتے ہیں : چین

پانامہ کے ساتھ بہتر تعلقات چاہتے ہیں : چین

بیجنگ : چینی صدر شی جن پنگ نے کہا ہے کہ پاناما کے چین کے ساتھ سفارتی تعلقات قائم کرنے کے فیصلے کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں جبکہ پا ناما کے صدر واریلا نے کہا کہ چین کے بیلٹ اینڈ روڈ انیشیئٹیو کی پوری حمایت کر تے ہیں ، لاطینی امریکہ میں سمندری شاہراہ ریشم کی تعمیر کے لئے پل کا کردار ادا کرنے پر تیار ہیں ، باہمی تعاون سے پوری دنیا کو فوائد حاصل ہونگے۔


چین کے صدر مملکت شی جن پنگ سے بیجنگ میں پا ناما کے صدر کارلوس واریلا نے ملاقات کی جس میں شی جن پنگ نے کہا کہ پاناما کے چین کے ساتھ سفارتی تعلقات قائم کرنے کے فیصلے کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔ پاناما کے صدر واریلا نے کہا کہ پانا ما کے عوام چین کے ساتھ سفارتی تعلقات کے قیام کی پوری حمایت کرتے ہیں۔سفارتی تعلقات کے قیام کے بعد گزشتہ پانچ ماہ میں دونوں ملکوں کے تعلقات اور تعاون کو خوب فروغ ملا ہے اور ثابت ہوا ہے کہ باہمی سفارتی تعلقات کا قیام درست فیصلہ ہے۔

پا ناما صدر شی جن پھنگ کے پیش کردہ دی بیلٹ اینڈ روڈ انیشیئٹیو کی پوری حمایت کرتا ہے۔اور لاطینی امریکہ میں سمندری شاہراہ ریشم کی تعمیر کے لئے پل کا کردار ادا کرنے پر تیار ہے۔ملاقات کے بعد دونوں صدور کی موجودگی میں معیشت و تجارت، ثقافت اور سیاحت سمیت دیگر شعبوں میں باہمی تعاون کی متعدد دستاویزات اور معاہدو ں پر دستخط کئے گئے۔