پاکستانی نژاد امریکی تاجر نے تاریخی اسٹیڈیم خریدنے سے معذرت کر لی

پاکستانی نژاد امریکی تاجر نے تاریخی اسٹیڈیم خریدنے سے معذرت کر لی
بعض حلقوں نے اسٹیڈیم کی فروخت پر فٹبال ایسوسی ایشن کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔۔۔۔۔۔۔فائل فوٹو

لندن: پاکستانی نژاد امریکی ارب پتی تاجر شاہد خان نے انگلش فٹبال ایسوسی ایشن کے اندرونی اختلافات کے بعد تاریخی ویمبلے اسٹیڈیم کی خریداری سے معذرت کر لی۔


لندن کے تاریخی ویمبلے اسٹیڈیم کی خریداری کے لیے شاہد خان نے 600 ملین پاؤنڈ کی آفر کی تھی جب کہ فٹبال ایسوسی ایشن اور شاہد خان کے درمیان 900 ملین پاؤنڈ پر معاملات طے پا گئے تھے۔

بعض حلقوں نے اسٹیڈیم کی فروخت پر فٹبال ایسوسی ایشن کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جب کہ ایسوسی ایشن کے بعض افراد بھی اسٹیڈیم کی فروخت پر تقسیم کا شکار تھے۔

فٹبال ایسوسی ایشن کی گورننگ کونسل کی گزشتہ ہفتے ہونے والی میٹنگ کے بعد شاہد خان نے اسٹیڈیم کی خریداری سے معذرت کی۔ میٹنگ کے دوران فیصلہ کیا گیا کہ اسٹیڈیم کی فروخت کا کلی اختیار فٹبال ایسوسی ایشن کے پاس نہیں اور اسٹیڈیم کی جو قیمت لگائی گئی اس پر اسے فروخت نہیں کیا جا سکتا۔

فٹبال ایسوسی ایشن کے سینئر حکام اسٹیڈیم کی خریداری کے بعد حاصل ہونے والی رقم کو نچلی سطح پر فٹبال پر لگانا چاہتے تھے۔

دوسری جانب شاہد خان کا کہنا ہے کہ وہ انگلش فٹبال کے ذریعے لوگوں کو قریب لانا چاہتے ہیں نہ کہ ان میں دوریاں پیدا کریں اور فی الحال اسٹیڈیم کی خریداری سے معذرت چاہتا ہوں۔

شاہد خان نے عزم کا اظہار کیا کہ فٹبال ایسوسی ایشن جب اسٹیڈیم کی فروخت پر متفق ہو جائے گی تو اس کی نئی قیمت لگائی جائے گی۔ ویمبلے اسٹیڈیم قومی خزانہ ہے اور اس کا احترام کرتا ہوں۔

ویمبلے اسٹیڈیم کو برطانیہ میں تاریخی حیثیت حاصل ہے جہاں 1920 سے میچز کھیلے جا رہے ہیں اور اس کی فروخت کی خبریں آنے کے بعد برطانوی حکومت کی جانب سے بھی شدید تنقید کی گئی تھی۔