ویکسین لگوانے کے بعد منموہن سنگھ کا کورونا ٹیسٹ مثبت آ گیا

ویکسین لگوانے کے بعد منموہن سنگھ کا کورونا ٹیسٹ مثبت آ گیا
کیپشن:    ویکسین لگوانے کے بعد منموہن سنگھ کا کورونا ٹیسٹ مثبت آ گیا سورس:   فائل فوٹو

نئی دہلی: بھارت کے سابق وزیراعظم ڈاکٹر منموہن سنگھ کا کورونا ٹیسٹ مثبت آگیا ہے جس کے بعد انہیں اسپتال میں داخل کردیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کانگریس کے 88 سالہ بزرگ رہنما ڈاکٹر منموہن سنگھ نے عالمی وبا قرار دیے جانے والے کورونا وائرس سے بچاؤ کی ویکسین بھی لگوائی ہوئی ہے۔ سابق بھارتی وزیراعظم منموہن سنگھ نے کورونا ویکسین کی پہلی خوراک 4 مارچ کو لگوائی تھی جب کہ دوسری خوراک 3 اپریل کو لگوائی تھی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ڈاکٹر منموہن سنگھ کو تیز بخار تھا اور طبیعت بہتر نہیں تھی جس کی بنا پر انہیں اسپتال میں داخل کردیا گیا ہے۔ اسپتال کے ذمہ دار ذرائع کے مطابق سابق وزیراعظم کو احتیاطی تدابیر کے طور پر اسپتال میں داخل کیا گیا ہے۔

ڈاکٹر منموہن سنگھ نے گزشتہ روز بھارت میں کورونا کے بڑھتے ہوئے کیسز پر اظہار تشویش ظاہر کرتے ہوئے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کو مشورہ دیا تھا کہ وہ ویکسینیشن کے عمل میں تیزی لائیں، عام افراد سے رابطے میں آنے والے افراد کو ترجیحی بنیادوں پر ویکسین لگائیں اور ویکسین کے لیے عمر کی حد میں بھی کمی کریں۔

دوسری جانب دہلی میں وبا کی وجہ سے مریضوں کی شرح بڑھ کر تقریبا 30 فیصد ہوگئی ہے اور دہلی کے اسپتالوں میں بیڈ اور آئی سی یو کی بہت بڑی قلت پیدا ہوگئی ہے۔ دہلی حکومت کے سب سے بڑے لوک نائک اسپتال میں نہ تو عام بستر اور نہ ہی آئی سی یو بستر خالی ہے۔ کورونا کے مریض تمام اسپتالوں میں کھڑے ہیں۔

اس صورتحال میں دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے پیر کو لیفٹیننٹ گورنر انیل بیجل سے ملاقات میں مکمل لاک ڈاؤن نافذ کرنے کا فیصلہ کیا۔

لاک ڈاؤن کے دوران نئی دہلی میں تمام مارکیٹیں بند رہیں گی اور ریستوران میں بیٹھنے کی اجازت نہیں ہوگی جب کہ ریلوے اسٹیشن ، بس اسٹیشن ، ہوائی اڈے کے لیے مسافروں کو ٹکٹ دکھانا لازمی ہو گی ۔