پاکستان اور ایران نے تیسری اہم بارڈر کراسنگ کھولنے کا فیصلہ کرلیا

پاکستان اور ایران نے تیسری اہم بارڈر کراسنگ کھولنے کا فیصلہ کرلیا
سورس:   file photo

اسلام آباد، پاکستان اور ایران نے آئندہ چند روز میں مند اور پشین کے مقام پر تیسری بارڈر کراسنگ کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔

سفارتی ذرائع کے مطابق وزیر خارجہ کے دورہ ایران کے دوران مفاہمت کی یادداشت پر دستخط ہوں گے جبکہ پاک ایران ایم او یوز اضافی سرحدی گزرگاہوں، مارکیٹوں اور ان سے منسلک سہولیات کے بارے میں ہوں گے۔

 پاکستان اور ایران کے درمیان گبد ریمدان بارڈر کراسنگ کا افتتاح کر دیا گیاجبکہ  پاک ایران تیسری بارڈر کراسنگ پاکستان میں مند اور ایران کی طرف پشین میں کھول دی جائے گی۔

ایرانی وزیر برائے روڈز اور شہری ترقی محمد اسلامی تیسرے ٹرمینل کا افتتاح کریں گے۔

 ترجمان دفتر خارجہ زاہد حفیظ چوہدری کا کہنا تھا مند، پشین بارڈر کراسنگ سے علاقے کے مکینوں کو روزگار اور تجارتی فوائد حاصل ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان اور ایران کے مابین دو طرفہ تجارت اور سیاحت کو مزید فروغ ملے گا، بارڈر کراسنگ سے پاک ایران عوامی رابطوں، خصوصی مذہبی سیاحت کو فروغ ملے گا۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق نئی سرحدی گزرگاہ کی شروعات حکومت پاکستان کی معاشی سفارت کاری کی عکاس ہے۔

خیال رہے کہ دسمبر 2020 میں پاکستان اور ایران کے درمیان گبد ریمدان بارڈر کراسنگ کا افتتاح کیا گیا تھا جبکہ پاکستان اور ایران کے درمیان یہ میر جاوہ تافتان کے بعد دوسری بارڈر کراسنگ ہے۔