پاکستان نے امریکی مطالبات کو تسلیم نہ کرنے کا فیصلہ کر لیا

پاکستان نے امریکی مطالبات کو تسلیم نہ کرنے کا فیصلہ کر لیا

کراچی: پاکستانی حکومت نے امریکا اور افغانستان سے اپنے تعلقات پر کوئی تبدیلی نہیں کرے گا تاہم پاکستان کی مزید ڈومور پر عمل نہیں کرے گا اور برابری کی سطح کے تعلقات کو ترجیح دی جائے گی۔


وفاقی حکومت کے اہم ترین ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ وفاق کے اعلیٰ حلقوں کی جانب سے امریکی حکومت کے پاکستان اور افغانستان سے تعلقات کے حوالے سے حالیہ بیانات اور رپورٹس کا جائزہ لیا گیاہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ اگر امریکی حکومت نے ممکنہ طور پر پاکستان کے حوالے سے اپنی پالیسی میں تبدیلی کرتے ہوئے کوئی پابندی لگانے سمیت ڈومور کا مطالبہ کیا تو وفاق ان تمام امور کاجائزہ لے گا۔

پاکستان ٹرمپ حکومت کا کوئی ڈومور کا مطالبہ قبول نہیں کرے گا۔ وزیراعظم کی ہدایت پر وزیرخارجہ اور سیکریٹری خارجہ سمیت اعلیٰ حکام جلد امریکا کا دورہ کریں گے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان کی جانب سے افغان حکومت کے ساتھ حالیہ رابطوں میں پیش رفت ہوئی ہے۔ افغان حکومت نے پاکستان کے ساتھ دہشت گردی کے خاتمے کیلیے مل کر اقدام کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے،دوسری طرف افغان حکومت اور پاکستان کے درمیان مفاہمتی عمل جاری رہے گا۔