حکومت اور اتحادی جماعتوں میں اختلافات مزید خراب ہو گئے

حکومت اور اتحادی جماعتوں میں اختلافات مزید خراب ہو گئے
فوٹو فائل

اسلام آباد: وزیر معدنیات عمار یاسر کے استعفے بعد حکومت اور اتحادی جماعتوں میں تعلقات مزید خراب ہو گئے ۔


تفصیلات کے مطابق وزیر معدنیات عمار یاسر کے استعفیٰ نے حکومت اور اتحادی جماعتوں کے درمیان تعلقات کا پرددہ چاک کر دیا ۔ وزیر معدنیات عمار یاسر جن کا تعلق حکومتی اتحادی جماعت مسلم لیگ ق کیساتھ ہے انہوں نے کل اپنے عہدے سے استعفیٰ دیدیا تھا۔ استعفیٰ کی وجہ بتاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ میے کام میں رکاوٹیں ڈالیں جا رہی ہیں۔جس کے بعد حکومت اور اتحادی جماعتوں کے اتحاد میں پھوٹ پڑھ گئی ہے ۔ اسی پھوٹ کے بعد وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار اقتدار نے  ڈوبتی کشتی بچانے کی کوشش کی لیکن  چودھری برادران نےملنے سےانکار کیا اور معاملہ وزیر اعظم کے سامنے اٹھانے کا اشارہ دیدیا ۔

صورتحال پر غور کیلئے مسلم لیگ ق نے اہم اجلاس بھی طلب کرلیا اور ق لیگ کے رہنما کامل علی آغا نے اختلافات کیوجہ ایشوز پر مشاورت نہ کرنا بتائی۔کامل علی آغا نے کہا  پہلے بھی دوسری جماعتوں کے اتحادی رہے ہیں لیکن  اتحادیوں سےایسا سلوک پہلے کبھی نہیں دیکھا ۔

ادھر بی اے پی نے بھیحکومت کو ٹف ٹائم دینے کی ٹھان لی۔مزید ایک وزارت دینے اور زبیدہ جلال کیوزارت کا قلمدان تبدیل کرنے کا مطالبہ کر دیا.زبیدہ جلال وفاقی وزیر برائے دفاعی پیداوار ہیں ۔