امریکہ کی مسئلہ کشمیر پر خفیہ مذاکرات کی پیشکش

امریکہ کی مسئلہ کشمیر پر خفیہ مذاکرات کی پیشکش

واشنگٹن: امریکا نے پہلی بار مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے مذاکرات پر بات چیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر دونوں ممالک کو اعلانیہ طور پر مذاکرات کی بحالی میں کوئی مجبوری یا مسئلہ در پیش ہے توپھر خفیہ سفارت کاری کے ذریعے ہی اس مسئلے کا حل نکالا جا سکتا ہے۔


بین الاقوامی میڈیا کے مطابق امریکہ نے مسئلہ کشمیر پر بات چیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ خطے میں استحکام کیلئے اس مسئلے کے حل کی طرف راستہ ہموار کرنے کی کوشش کرنا ہوگی۔ امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ امریکا پاکستان اور بھارت کو قریب لانے کی ہر ممکن کوشش کررہا ہے تاکہ دونوں ممالک کے درمیان تعطل کا شکار مذاکرات پھر سے بحال ہوں۔

انھوں نے مزید کہاکہ دونوں ممالک کسی نتیجے پر پہنچنے کیلئے ا علانیہ مذاکرات کے بجائے خفیہ مذاکرات کا راستہ بھی اختیار کرسکتے ہیں اور مذاکرات کی بحالی کیلیے امریکا اپنی کوششیں جاری رکھے گا۔انھوں نے کہا کہ اس مسئلے کی حل کیلئے پہل ناگزیر بن گئی ہے ،دونوں ممالک دہشت گردی کے خلاف مل کر لڑیں تاکہ بہتر نتائج برآمد ہو سکیں۔