چین نے راکٹ ٹیکنالوجی سے کام کرنے والا مصنو عی دل تیار کر لیا

چین نے راکٹ ٹیکنالوجی سے کام کرنے والا مصنو عی دل تیار کر لیا
کیپشن:   neo- heart

بیجنگ :چین نے راکٹ ٹیکنالوجی استعمال کرتے ہوئے مصنو عی دل ایجاد کر لیا ہے ،طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ توقع ہے اس سے لاگت میں کمی ہونے سے مقامی مریضوں کو فائدہ پہنچے گا ۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق جریدہ سائنس و ٹیکنالوجی ڈیلی نے سرکاری ملکیت چینی خلائی سائنس و ٹیکنالوجی کارپوریشن کی چائنہ اکیڈمی آف لانچ وہیکل کے سابق ڈائریکٹر لائی ہونگ کے حوالے سے کہا ہے کہ یہ مصنو عی دل جانوروں پر مکمل تجربات کے بعد ٹیسٹنگ کیلئے بھیج دیا گیا ہے ۔یہ دل چائنہ لانچ وہیکل ٹیکنالوجی اکادمی اور شمالی چین کے کیان جن کے ٹیدا نٹرنیشنل کارڈیو ویسکولر ہسپتال نے مشترکہ طور پر بنایا ہے ۔

یہ بھی پڑھیں:پاکستان میں ہر سال50ہزاربچے دل کے امراض کیساتھ پیداہوتے ہیں،پروفیسر ڈاکٹر مسعود صادق

  رپورٹ کے مطابق یہ مصنو عی دل ایک راکٹ سٹم سے مقناطیسی اور مائع صعود استعمال کرتاہے توقع ہے کہ ’’خلائی دل ‘‘ 13ویں پانچ سالامنصوبے (2016-20)کے دوران کلینکل آزمائش کے مراحل سے گزرے گا ۔