آج نواز شریف، مریم اور صفدر پر فرد جرم عائد کیے جانے کا امکان

 آج نواز شریف، مریم اور صفدر پر فرد جرم عائد کیے جانے کا امکان

اسلام آباد: سابق وزیراعظم نواز شریف، ان کی بیٹی اور داماد کے خلاف ریفرنسوں کی سماعت کی آج احتساب عدالت میں ہو گی۔ نواز شریف کی عدم حاضری کے باوجود ملزمان پر فرد جرم عائد کیے جانے کا امکان ہے ۔ سماعت کے موقع پر سیکیورٹی کے خصوصی انتظامات کیے گئے ہیں۔ نواز شریف کی صاحبزادی خصوصی طیارے کے ذریعے اسلام آباد احتساب عدالت پہنچے گی۔


احتساب عدالت اسلام آباد میں سابق وزیراعظم نواز شریف کے خلاف لندن فلیٹس، فلیگ شپ انوسٹمنٹ اور العزیزیہ ا سٹیل ملز ریفرنسز کی سماعت ہونی ہے۔ نواز شریف اپنی اہلیہ کلثوم نواز کی علالت کے باعث لندن میں موجود ہیں تاہم نیب قوانین کی شق17 سی کے تحت ملزم کے پیش نہ ہونے کے باوجود فرد جرم عائد کیے جانے کا امکان ہے۔

مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر پر صرف لندن فلیٹس ریفرنس میں فرد جرم عائد کی جائے گی۔ عدالت نے لندن میں رہائش پذیر حسن نواز اور حسین نواز کو مفرور ملزم قرار دے کر ان کا کیس الگ کر رکھا ہے۔

گزشتہ سماعت پر احتساب عدالت میں ہلڑ بازی کے باعث فرد جرم عائد نہیں کی جا سکی تھی۔ اس بار احتساب عدالت کی سکیورٹی یقینی بنانے کے لیے اعلیٰ سطح کا اجلاس بھی ہوا تاہم رینجرز تعینات نہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

پولیس اور ایف سی اہلکار سکیورٹی فرائض سرانجام دیں گے جبکہ احاطہ اور کمرہ عدالت میں وکلاء اور میڈیا نمائندگان کے داخلے کے لیے خصوصی فہرستیں تیار کی گئی ہیں۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں