بیلسٹک میزائل سسٹم سے خطے میں عدم توازن پیدا ہو گا، دفتر خارجہ

بیلسٹک میزائل سسٹم سے خطے میں عدم توازن پیدا ہو گا، دفتر خارجہ
فوٹو فائل

اسلام آباد:دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر فیصل نے بھارت کا سیاہ چہرہ ایک مرتبہ پھر دنیا کے سامنے لاتے ہوئے کہا ہے کہ ایس 400 کی خریداری بھارت کی بیلسٹک میزائل سسٹم کے حصول کی کوششوں کا حصہ ہے، بیلسٹک میزائل سسٹم سے خطے میں عدم توازن پیدا ہو گا۔


تفصیلات کے مطابق اپنی ہفتہ وار بریفنگ میں بھارت کی جانب سے ایس فور ہنڈرڈ میزائل سسٹم کی خریداری پر ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر فیصل نے ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ خطے میں ہتھیاروں کی غیر ضروری دوڑ شروع ہو گئی ہے، ایس 400 کی خریداری بھارت کی بیلسٹک میزائل سسٹم کے حصول کی کوششوں کا حصہ ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ بیلسٹک میزائل سسٹم سے خطے میں عدم توازن پیدا ہو گا۔ پاکستان نے 1998ء کے ایٹمی دھماکوں کے بعد خطے میں ہتھیاروں کے روک تھام کی تجویز دی تھی۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان خطے میں اسٹریٹجک توازن کو برقرار رکھنے اور اپنے دفاع کے لیے کم سے کم دفاعی صلاحیت کے حصول کے عزم کا اعادہ کرتا ہے۔

پاک بھارت مذاکرات پر بات کرتے ہوئے ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ پاکستان پرامن ہمسائیگی کے قائداعظم کے نظریے پر یقین رکھتا ہے، بھارت سے مذاکرات نہ ہوئے تو کرتارپور سمیت کسی معاملے پر بات نہیں بڑھ سکتی، مذاکرات کیلئے بھارت کو منا نہیں رہے بلکہ پہلا خط ان کی طرف سے آیا تھا۔