سنتھیا رچی کیس میں رحمن ملک سے جواب طلب کر لیا

سنتھیا رچی کیس میں رحمن ملک سے جواب طلب کر لیا

اسلام آباد:اسلام آباد ہائیکورٹ نے امریکی خاتون سنتھیا رچی کی سابق وزیرداخلہ وپیپلز پارٹی رہنماء  رحمن ملک کے خلاف مقدمہ درج کرانے کی درخواست پرنوٹس جاری کرتے ہوئے رحمن ملک، ایس پی کمپلینٹ، ایس ایچ او سے جواب طلب کرلیا۔

چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ جسٹس اطہر من اللہ نے درخواست کی سماعت کی، سنتھیا ڈی رچی کی جانب سے وکیل عمران فیروز پیش ہوئے۔سنتھیا کی جانب سے دائر درخواست کے متن میں کہا گیا کہ رحمن ملک سے گھناونے جرم کا ارتکاب ہوا ہے لیکن اس کے خلاف کوئی کارروائی نہیں ہوئی، جبکہ جسٹس آف پیس نے درخواست مسترد کرتے ہوئے اہم قانونی نکات کو مدنظر نہیں رکھا۔

درخواست میں استدعا کی گئی کہ جسٹس آف پیس کا یکم اکتوبر کا فیصلہ کالعدم قرار دیا جائے، ایس پی کمپلینٹ کو حکم دیا جائے کہ وہ رحمان ملک کے خلاف مقدمہ درج کرے۔جسٹس اطہر من اللہ نے سنتھیا رچی کے وکیل سے استفسار کیا کہ اس بارے میں سپریم کورٹ کا کیا فیصلہ آیا ہے؟ وکیل عمران فیروز نے عدالت کو بتایا کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کی کاپی آئندہ سماعت پر عدالت میں جمع کرادوں گا۔عدالت نے فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے سماعت 23 اکتوبر تک ملتوی کردی