ترک ریڈ کراس نے ایک لاکھ روہنگیا مسلمانوں کے لیے گھر تعمیر کرنے کا اعلا ن کر دیا

ترک ریڈ کراس نے ایک لاکھ روہنگیا مسلمانوں کے لیے گھر تعمیر کرنے کا اعلا ن کر دیا

انقرہ:ترکش ریڈ کراس سوسائٹی مظلوم مسلمانوں کے لیے ایک لاکھ گھر تعمیر کر کے دے گی،ترکش ریڈ کراس یہ گھر بنگلہ دیش میں تعمیر کرے گی۔ترکی کی ریڈ کراس سوسائٹی کے سربراہ جو کہ روہنگیا مسلمانوں کی حالت زار کے چشم دید گواہ ہیں اور وہ ان لوگوں کی مشکلات کم کرنے کے لیے کوشاں ہیں اس سلسلے میں انکی ملاقات بنگلہ دیشی حکام سے بھی ہوئی ہے۔

یہ گھر سٹیل کے میٹریل پر مبنی ہونگے جو کہ چوبیس ہزار خاندانوں کے لیے بنائے جائیں گئے۔ ان گھروں میں کچن اور باتھ روم کی سہولت بھی موجود ہو گی۔

ترکوں کی طرف سے تعمیر شدہ کیمپ میں مساجد،سکول اور میڈیکل کیمپ کی سہولت بھی موجود ہو گی۔ ریڈ کراس سوسائٹی کے سربراہ کا مزید کہنا تھا انکی 14ستمبرکو بنگلہ دیشی حکام سے ملاقات ہو ئی تھی بنگلہ دیشی حکام نے اس تعمیراتی کام پر رضامند ی کا اظہار کیا ہے،اس سلسلے میں بنگلہ دیشی حکام نے جگہ بھی مختص کر لی ہے۔ اُنکا مزید کہنا تھا طویل بات چیت کے بعد حکام کو راضی کر لیا گیا۔

بنگلہ دیش کے اس علاقے میںایک ملین روہنگیا مسلمان موجود ہیں اور ترکی وہ پہلا ملک جس کو بنگلہ دیشی حکام نے مستقل بنیادوں پر کیمپ تعمیر کرنے کی اجازت دی ہے۔ ان کہنا تھا کہ ہم وعدہ کرتے ہیں کہ حالیہ بحران کے خاتمے کے بعد روہنگیا اپنے گھروں کو واپس چلے جائیں گئے۔

اُنھوں نے مزید کہا خوراک اور میڈیکل کیمپ کی سلسلہ جاری رہے گا