سرکاری ہیلی کاپٹروں کا مبینہ غیر قانونی استعمال، عمران خان کیخلاف تحقیقات کیلئے ٹیم تشکیل

اسلام آباد: قومی احتساب بیورو کی ہدایت پر نیب خیبر پختونخوا نے تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کی طرف سے دو سرکاری ہیلی کاپٹروں کے مبینہ غیر قانونی استعمال کی تحقیقات کے لئے ٹیم مقرر کر دی۔ ڈائریکٹر نیب خیبر پختونخوا کی سربراہی میں قائم ٹیم عمران خان کے سرکاری ہیلی کاپٹروں میں دوروں کی چھان بین کرے گی۔

 

تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان پر خیبرپختونخوا کے دو ہیلی کاپٹروں پر 74 گھنٹے غیر قانونی طور پر سفر کرنے کے الزامات ہیں۔

 

چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے 2 فروری کو ہیلی کاپٹر اسکینڈل کا نوٹس لیا تھا۔ نیب خیبر پختونخوا نے ہیڈ کوارٹر سے موصولہ مراسلے کی بنیاد پر الزامات کی تحقیقات کے لئے مشترکہ ٹیم تشکیل دی ہے۔

 

تحقیقاتی ٹیم کی سربراہی ڈائریکٹر نیب خیبرپختونخوا نوید حیدر کرینگے۔ ٹیم میں قانونی ماہرین اور تحقیقاتی افسران بھی شامل ہیں۔

 

ذرائع کا کہنا ہے کہ عمران خان پر ایم آئی 171ہیلی کاپٹر پر 22 گھنٹے جبکہ ایکیوریل ہیلی کاپٹر پر 52گھنٹے سفر کے بدلے صرف 21 لاکھ روپے ادا کرنے کا الزام ہے۔

 

ذرائع کے مطابق عمران خان پر ایم آئی 171 ہیلی کاپٹر پر بنی گالا سے کوہاٹ، پشاور، مردان، بٹگرام، دیر اور کمراٹ جبکہ ایکیوریل ہیلی کاپٹر پر بنی گالا سے پشاور، کوہاٹ، ایبٹ آباد، ہری پور، چترال، سوات اور نوشہرہ تک کا سفر کرنے کے الزامات ہیں۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں