مصر میں طلبہ کو’ ’بیلی ڈانس“ دکھانے پر پرنسپل و اساتذہ کے خلاف کارروائی

مصر میں طلبہ کو’ ’بیلی ڈانس“ دکھانے پر پرنسپل و اساتذہ کے خلاف کارروائی

قاہرہ:افریقی ملک مصر میں سکول کے طلبہ کو ’بیلی ڈانس‘ دکھانے والے پرنسپل کو معطل کرکے اساتذہ کا تبادلہ کردیا گیا۔


بیلی ڈانس مشرق وسطیٰ اور افریقی ممالک خاص طور پر مصر، مراکش، الجیریہ، تیونس، اور لبنان سمیت دیگر میں کافی مقبول ہے جب کہ مصری عوام اور ادارے اس ڈانس کو اپنا ثقافتی ڈانس مانتے ہیں۔

مصر میں عام تقریبات میں بھی بیلی ڈانس کی پرفارمنس کی جاتی ہے تاہم اس ڈانس کے چند انداز پر پابندی عائد ہے یا انہیں مصری معاشرے میں اچھا نہیں سمجھا جاتا۔

عرب اخبار ’خیلج ٹائمز‘ نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ مصر کے صوبے منوفیہ کے شہر السادات کے ایک اسکول میں نوجوان طلبہ کو ڈیجیٹل اسکرین پر قدرے نامناسب بیلی ڈانس دکھایا گیا تھا جس پر حکومت نے نوٹس لیا۔

اخبار نے اپنی رپورٹ میں مصر کے عربی اخبار ’الوطن‘ کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ پرنسپل اور اساتذہ نے اتوار کی چھٹی سے قبل آخری کلاس میں طلبہ کو بڑی ڈیجیٹل اسکرین پر بیلی ڈانس کی پرفارمنس دکھائی تھی۔