پنجاب اسمبلی کی پارلیمانی کمیٹی نگران وزیراعلیٰ کے تقرر میں ناکام، معاملہ الیکشن کمیشن کو جائے گا

پنجاب اسمبلی کی پارلیمانی کمیٹی نگران وزیراعلیٰ کے تقرر میں ناکام، معاملہ الیکشن کمیشن کو جائے گا

لاہور: پنجاب اسمبلی کی پارلیمانی کمیٹی نگران وزیر اعلیٰ کے تقرر پر متفق نہ ہو سکی جس کے باعث اب یہ معاملہ الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کے پاس جائے گا۔ 

تفصیلات کے مطابق سپیکر پنجاب اسمبلی سبطین خان کی زیر صدارت نگران وزیر اعلی کے تقرر کیلئے بنائی جانے والی حکومتی اور اپوزیشن اراکین پر مشتمل 6 رکنی پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں دونوں جانب سے پیش کردہ ناموں پر غور کیا گیا۔

دوران اجلاس متحدہ اپوزیشن کے ارکان اپنے دو نام میں سے کسی ایک کو ہی نگراں وزیر اعلیٰ کیلئے اصرار کرتے رہے جبکہ حکومتی ارکان نے احمد سکیھرا اور نوید اکرم چیمہ میں سے کسی ایک کو نگراں وزیر اعلیٰ تقرری کی تجویز دی۔

پارلیمانی کمیٹی کے اراکین میں کسی ایک نام پر اتفاق رائے نہ ہوسکا جس کے بعد اب یہ معاملہ الیکشن کمیشن کو بھیج دیا جائے گا جس کے بعد الیکشن کمیشن محسن نقوی، احد چیمہ، نوید اکرم چیمہ اور احمد نواز سکھیرا میں سے کسی ایک کو نگران وزیر اعلی مقرر کرے گا۔

واضح رہے کہ آئینی طور پر نگراں وزیراعلیٰ پنجاب کی تقرری کیلئے الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کے پاس 48 گھنٹے کا وقت ہو گا۔

مصنف کے بارے میں