ایل او سی پر فائرنگ، بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر آج پھر دفتر خارجہ طلب

اسلام آباد: ایل او سی کی مسلسل خلاف ورزی پر پاکستان نے بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر جے پی سنگھ کو دفتر خارجہ طلب کیا اور بھارتی فوج کی بلا اشتعال فائرنگ کے نتیجے میں پاک فوج کے جوان اور 2 شہریوں کی شہادت کے خلاف شدید احتجاج ریکارڈ کروایا۔ بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کو احتجاجی مراسلہ بھی دیا گیا جس میں کہا گیا کہ بھارت مسلسل ایل او سی پر فائرنگ کرکے سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی کر رہا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ نفیس ذکریا نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر جاری اپنے پیغام میں بتایا بھارت نے ایل او سی پر جنگ بندی معاہدے کی ایک بار پھرخلاف ورزی کی۔ بھارتی فوج نے نیزہ پیر، سبز کوٹ اور کیانی سیکٹر میں بلااشتعال فائرنگ کی جس کے نتیجے میں ایک فوجی جوان سمیت تین افراد شہید جبکہ تین بچوں اور دو فوجیوں سمیت سات افراد زخمی ہوئے۔

انہوں نے کہا پاک فوج کی جانب سے دشمن کی اشتعال انگیزی کا منہ توڑ جواب دیا گیا ۔ بھارتی فوج کی فائرنگ سے شہید ہونے والوں میں محمد افضل، محمد اقبال اور محمد الیاس شامل ہیں ۔ زخمی ہونے والے بچوں میں 12 سالہ قصد، 9 سالہ عمیر اور حسیب شامل ہیں۔

ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ بھارت کا جان بوجھ کر شہری آبادی کو نشانہ بنانا قابل مذمت ہے۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں