لانگ مارچ میں توڑ پھوڑ کے کیس میں پی ٹی آئی رہنماؤں کی ضمانتیں منظور

لانگ مارچ میں توڑ پھوڑ کے کیس میں پی ٹی آئی رہنماؤں کی ضمانتیں منظور

اسلام آباد: وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کی مقامی عدالت نے لانگ مارچ کے دوران توڑ پھوڑ کے کیس میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) رہنماؤں کی عبوری ضمانتوں کو کنفرم کرتے ہوئے ان کی ضمانتیں منظور کر لی ہیں۔ 

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد کی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن عدالت میں 25 مئی کو ہونے والے لانگ مارچ میں توڑ پھوڑ کے کیس کی سماعت ہوئی جس دوران میں پی ٹی آئی رہنما قاسم سوری ، شہریار آفریدی ، علی محمد خان ، اسد عمر، فیصل جاوید اور دیگر عدالت میں پیش ہوئے۔

دوان سماعت فاضل جج نے استفسار کیا کہ ابھی عدالت میں کون کون سے ملزمان پیش ہوئے ہیں اور وکیل کے بتانے پر جج نے ملزمان کو ہدایت کی کہ آپ کی حاضری لگ گئی ہے آپ بے شک چلے جائیں۔

عدالت نے ریمارکس دئیے کہ تھانہ ترنول، گولڑہ اور آئی نائن کے مقدمے میں کوئی شامل تفتیش نہیں ہوا، میں تفتیشی کو پابند کر دیتا ہوں آپ شامل تفتیش ہو جائیں۔

ذرائع کے مطابق عدالت نے تمام مقدمات میں پی ٹی آئی رہنماؤں کی ضمانتوں کی درخواست پرفیصلہ محفوظ کر لیا جسے کچھ دیر بعد سناتے ہوئے تمام افراد کی عبوری ضمانتیں کنفرم کر دی گئیں۔ 

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نے قاسم سوری، شہریار آفریدی، علی محمد خان، اسد عمر، فیصل جاوید، شیراز بشارت، راجہ خرم نواز، شیخ رشید، مراد سعید، پرویز خٹک، شاہ محمود قریشی اور دیگر کی ضمانتیں منظور کرلیں۔

مصنف کے بارے میں