دیپکا کے حق میں بولنا معروف بھارتی اداکارہ کو مہنگا پڑ گیا

دیپکا کے حق میں بولنا معروف بھارتی اداکارہ کو مہنگا پڑ گیا

ممبئی: معروف بھارتی اداکارہ راکھی ساونت کودیپکا اور فلم "پدماوتی "کے حق میں بولنا مہنگا پڑ گیا ہے۔


معروف اداکارہ راکھی ساونت نے سماجی وابطوں کی ویب سائٹ پر کہا کہ سجنے لیلی بھنسالی نے بہت اچھی فلم بنائی ہے اوراپنے بیان میں انہوں نے دیپکا ، رنویر سنگھاور شاہد کپور کی کا رکردگی کو بھی بہت سراہا تھا جس کے بعد ہندو انتہا پسندوں کی جانب سے اداکارہ راکھی ساونت کو ’’پدماوتی‘‘ کی حمایت پر منہ کالا کرنے کی دھمکی دی گئی ہے۔

یاد رہے کہ دپیکا نے گزشتہ دنوں اپنی فلم کے حوالے سے کہا تھا کہ ان کی فلم کو ریلیز سے کوئی نہیں روک سکتا۔اس کے جواب میں ہندو انتہا پسندوں نے ’پدماوتی‘ کی ریلیز روکنے کی دھمکی دیتے ہوئے کہا ہے کہ فلم کی نمائش ہوئی تو نہ صرف دپیکا پڈوکون کی ناک کاٹ دیں گےبلکہ ہدایتکار سجنے لیلا بھنسالی کے سر کی بھی قیمت بھی 5 کروڑ روپے مقرر کردی گئی ہے۔اور اب اسی جماعت نے راکھی کا بھی منہ کالا کرنے کی دھمکی دے دی ہے۔

فلم کی مشکلات یہاں پر ختم نہیں ہوتیں کیونکہ فلم کو 1دسمبر کو نمائش سے روک دیا گیا ہے ساتھ ہی ساتھ ہندو انتہا پسندوں نے یکم دسمبر کو پورے بھارت میں ہڑتال کی بھی کال دے دی ہے۔