الفاظ بڑھانے پر ٹوئٹر کو تنقید کا سامنا

الفاظ بڑھانے پر ٹوئٹر کو تنقید کا سامنا

نیویارک: سماجی رابطے کے مایہ ناز پلیٹ فارم ٹوئٹر نے ویب سائٹ پر ٹوئٹ کے الفاظ بڑھاکر کمپنی نے خود اپنی انفرادیت کھودی۔


غیر ملکی میڈیا کے مطابق الفاظ کی تعداد280 تک بڑھانے پر ٹوئٹر کو دنیا کے جانے مانے رائٹرز کی تنقید کا سامنا ہے۔جے کے رولنگ ، نیل گے مین اور سٹیفن کنگ جیسے بڑے رائٹر نے ٹوئٹس کے الفاظ کی حد بڑھنے کو اچھا اقدام قرار نہیں دیا۔

ہیری پورٹر کی رائٹر جے کے رولنگ کا کہنا ہے کہ ٹوئٹس کے کم الفاظ ہی اس ویب سائٹ کی انفرادیت تھی۔ 280 الفاظ کی حد نے یہ انفرادیت ختم کرد ی اور ٹوئٹ کے الفاظ بڑھانے پر ٹوئٹرصارفین کی طرف سے بھی زیادہ اچھا تاثر نہیں آرہا ہے۔