اقتصادی رابطہ کمیٹی نے گندم برآمد کرنے کی منظوری دے دی

اقتصادی رابطہ کمیٹی نے گندم برآمد کرنے کی منظوری دے دی
گندم پنجاب اور سندھ سے برآمد کی جائے گی، فائل فوٹو

اسلام آباد: اقتصادی رابطہ کمیٹی نے 5 لاکھ ٹن گندم برآمد کرنے کی منظوری دے دی۔ وزیر خزانہ اسد عمر کی زیرصدارت اقتصادی رابطہ کمیٹی کا اجلاس ہوا جو اسد عمر کی بیرون ملک روانگی کی وجہ سے مقررہ وقت سے پہلے ختم ہو گیا۔


ذرائع کے مطابق اجلاس جلدی ختم ہونے سے غربت مُکاؤ فنڈ کے لیے رقم کی فراہمی، ڈھوک حسین اور بٹرسم فیلڈ سے گیس کی فراہمی کے معاملے سمیت کراچی میں ایل این جی ٹرمینل کی تعمیر سے پیدا ہونے والے مسائل پر غور مؤخر کر دیا گیا۔

ذرائع کا کہنا ہےکہ اجلاس میں گنے کی قیمت اور چینی کی پیدواری لاگت طے کرنے اور اسٹیل ملزکے مرحوم ملازمین کے وارثوں کے لیے بقایا جات کا معاملہ بھی مؤخر کر دیا گیا۔

اس کے علاوہ صنعتی اور گھریلو صارفین کے لیے گیس لوڈ مینیجمنٹ پروگرام کی منظوری بھی مؤخر کر دی گئی۔

ای سی سی اجلاس کے بعد جاری اعلامیے کے مطابق اقتصادی رابطہ کمیٹی نے 5 لاکھ ٹن گندم برآمد کرنے کی منظوری دے دی۔ گندم پنجاب اور سندھ سے برآمد کی جائے گی، صوبائی حکومتیں اپنے اپنے حصے کی برآمد گندم پر سبسڈی دیں گی جب کہ پاسکو کی طرف سے برآمد گندم پر وفاقی حکومت سبسڈی ادا کرے گی۔