برطانیہ نے شریف فیملی کے خلاف ثبوت نیب کو دینے سے انکار کردیا

برطانیہ نے شریف فیملی کے خلاف ثبوت نیب کو دینے سے انکار کردیا

لندن:شرئف خاندان کو جہاں گزشتہ روز نیب عدالت میں فرد جرم کے بعد مشکلات کا سامنا تھا وہیں کچھ راحت کی سانس ملی ہے،کیونکہ برطانیہ میں سابق وزیر اعظم کے خلاف ثبوت جمع کرنے والی نیب ٹیم کی لندن میں ملاقات بے سود ثابت ہو رہیں اور برطانوی حکام نے نیب ٹیم کو شریف فیملی کے خلاف ثبوت دینے سے معذرت کر لی ہے۔ 


ذرائع کے مطابق شریف فیملی کے خلاف شواہد اکٹھے کرنے کیلئے لندن جانے والی نیب ٹیم کی برطانوی حکام سے اب تک کی جانے والی تمام ملاقاتیں بے سود رہی ہیں اور برطانوی حکام نے کہا ہے کہ قانونی پیچیدگیوں کے باعث وہ شریف فیملی کے حوالے سے دستاویزات نیب کے حوالے نہیں کرسکتے۔ نیب کی ٹیم شریف فیملی کے خلاف شواہد اکٹھے کرنے کیلئے لندن میں موجود ہے ، جہاں نیب اہلکار گورنمنٹ اور پرائیویٹ اداروں کے علاوہ مختلف افراد سے ملاقاتیں کر رہے ہیں ۔ ٹیم لندن بھیجنے سے پہلے نیب نے برطانوی حکام کو خط لکھ کر تحقیقات میں تعاون کی اپیل بھی کی تھی۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز نیب عدالت نے شریف خاندان کی تمام درخواستیں مسترد کر دیں تھیں ۔ جس کے بعد سابق وزیر اعظم نواز شریف، ان کی صاحبزادی  مریم نواز اور داماد کیپٹن صفدر پر فرد جرم عائد کر دی گئی تھی ۔